انڈس ہسپتال کینسر میں مبتلا بچوں کو مفت علاج کی سہولتیں مہیا کررہا ہے؛ ابراہیم جمالی

لندن (اکرم عابد) انڈس ہیلتھ نیٹ ورک یوکے چیپٹر کے زیراہتمام ایک گالف ٹورنامنٹ ہوا جسکا مقصد پاکستان میں انڈس ہاسپٹلز اور اس کے نیٹ ورک کی خدمات کے متعلق آگاہی فراہم کرنا تھا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے نیٹ ورک کے ڈائریکٹر یوکے ابراہیم جمالی کا کہنا تھا کہ انڈس ہسپتال نیٹ ورک ان منفرد اداروں میں سے ایک ہے جو کینسر میں مبتلا بچوں کو علاج کی مفت سہولتیں مہیا کررہا ہے اور اب تک ساڑھے دس ہزار بچے اس سہولت سے مستفید ہوچکے ہیں اور یہ سلسلہ مسلسل آگے بڑھ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بچوں کے کینسر ہسپتال میں نہ صرف پاکستان بھر سے بلکہ ایران اور افغانستان سے بھی بیمار بچے علاج کرانے کے لیے آتے ہیں، جنہیں مفت علاج کی سہولت مہیا کی جاتی ہے۔

تقسیم انعامات کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انکا مزید کہنا تھا کہ نڈس ہاسپٹل اب پورے نیٹ ورک کی صورت اختیار کرچکا ہے۔ پرائمری ہیلتھ کیئرز یونٹس کے علاوہ14بڑے ہسپتال پاکستان کے مختلف شہروں میں نادار اور ضرورت مند افراد کی خدمت میں مصروف عمل ہیں اور انڈس نیٹ ورک 52 ڈسٹرکٹ تک پھیل چکا ہے اور اس نیٹ ورک کے اداروں کے ذریعے ہر ماہ تین لاکھ سے زائد ضرورت مند افراد کو علاج کی مفت اور معیاری سہولتیں مہیا کی جارہی ہیں۔
گالف کے شوقین حضرات کی بڑی تعداد نے ٹورنامنٹ میں حصہ لیا اور کینسر میں مبتلا بچوں کے علاج کے لیے عطیات بھی پیش کیے۔

پاکستان ہائی کمیشن لندن کے نمائیندے ہیڈ آف چانسلری حسن علی ضیغم نے کہا کہ ٹورنامنٹ کا انعقاد بہت اچھی کاوش ہے۔ پاکستانی چیرٹی کے کاموں کے لیے ہمیشہ دل کھول کر امداد دیتے ہیں۔ ہمارا شمار فیاض اور فراخ دل قوم کے طور پر ہوتا ہے اور ہم دنیا میں سب سے زیادہ چیرٹی دینے والی اقوام میں شامل ہیں۔ انہوں نے انڈس نیٹ ورک کے لیے نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا۔
سابق صدر یوکے پاکستان چیمبر آف کامرس اور سابق ممبر پنجاب اسمبلی پاکستان ڈاکٹر اشرف چوہان نے کہا کہ پاکستانی کمیونٹی چیرٹی کے کاموں میں ہمیشہ بڑھ چڑھ کر حصہ لیتی ہے اور پاکستان میں جاری متعدد چیرٹی پراجیکٹس میں برطانیہ کے پاکستانیوں کا بڑا حصہ ہے۔
ٹورنامنٹ کے آرگنائزر سلیم زاہد نے کہا کہ گزشتہ برس کی نسبت اس سال ٹورنامنٹ کے انعقاد میں مشکلات کا سامنا تھا لیکن انڈس ہسپتال کی نیک نامی اور خدمات کے پیش نظر لوگوں نے کورونا وائرس کی موجودگی کے باوجود احتیاطی تدابیر کے ساتھ ٹورنامنٹ میں حصہ لیا۔

آخر میں پاکستان ہائی کمیشن کے ہیڈ آف چانسری حسن علی ضیغم نے ٹورنامنٹ جیتنے والوں میں انعامات تقسیم کئے جبکہ وینس ٹی وی کے چیئرمین طاہر علی نے انکی معاونت کی۔

50% LikesVS
50% Dislikes