شہباز شریف کی گرفتاری سے بہت دکھ ہوا، انہوں نے دیانتداری سے ملک و قوم کی خدمت کی: نواز شریف

لندن (اکرم عابد) مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف ویڈیو لنک کے ذریعے پارٹی کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہباز شریف کی گرفتاری سے ان کو بہت ہی زیادہ دکھ ہوا ہے کیونکہ شہباز شریف نے دیانتداری سے قوم اور ملک کی خدمت کی اور اس وقت جو کچھ ملک میں ہو رہا ہے اس سے ہمارے جذبے اور بڑھے ہیں۔

ان کا اپنے خطاب میں مزید کہنا تھا کہ انہیں فخر ہے ہمارے ساتھی جرأت سے حالات کا مقابلہ کر رہے ہیں وہ جن چیزوں کے خلاف برسر پیکار ہیں اس پر انہیں افسوس نہیں کیونکہ آج ہم انگریزوں کی غلامی سے نکل کر اپنوں کی غلامی میں آ گئے ہیں۔
نواز شریف نے مزید کہا کہ اپنے ملک میں غلام بن کر نہیں رہ سکتا اور پاکستانی بن کر رہوں گا جبکہ اب ان چیزوں کے خلاف اٹھ کھڑے ہونے کا فیصلہ کر چکا ہوں۔ دوٹوک فیصلہ کیا ہے ذلت کی زندگی نہیں جی سکتے بلکہ عزت کی زندگی گزاریں گے۔

دریں اثنا میڈیا سے گفتگو میں انکا کہنا تھا کہ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی گرفتاری انتہائی درجے کی ناانصافی اورظالمانہ اقدام ہے۔انھوں نے کہا کہ آل پارٹیز کانفرنس میں اپنی تقریر میں میں نے پہلے ہی کہہ دیاتھا کہ موجودہ حکومت اور سسٹم نے شرافت کے تمام اصول پامال کردئے ہیں اور یہ ہمارے قطعی ناقابل قبول ہے اس طرح کے حربے مسترد شدہ ہیں اور ہمارے لئے قابل قبول نہیں ہیں ، ہم سرنڈر نہیں کریں گے۔
انہوں نے مزید کہا کہ قوم توقع کررہی تھی کہ عاصم باجوہ کا احتساب کیاجائے گا اور ان سے پوچھا جائے گا کہ ایک سرکاری ملازم نے 20سال کے عرصے میں اتنے بھاری اثاثے کیسے بنالئے،اپنے بیٹے کے دفتر میں نواز شریف کے ساتھ ان کے بھتیجے سلمان شہباز شریف،اسحاق ڈار، عابد شیر علی ،ناصر بٹ،اعجاز گل اور علی ڈار بھی موجود تھے، سلیمان نے میڈیا کو بتایا کہ شہباز شریف نے پہلے ہی بتادیا تھا کہ عمران خان اورنیب انھیں جیل پہنچادیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ نیب اورعمران خان کا گٹھ جوڑ ثابت ہوگیاہے اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ عمران خان سیلکٹیڈ وزیراعظم ہیں اور وہ بری طرح ناکام ہوچکے ہیں وہ ایک کروڑ نوکریاں اور 50 لاکھ مکان دینے اورعوام سے کئے ہوئے دیگر وعدے پورے کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں، عوام کی توجہ اپنے وعدوں کی جانب سے مبذول کرانے اور انھیں بیوقوف بنانے کیلئے وہ اس طرح کے حربے اختیار کررہے ہیں ،ہمیں عوام کی عدالت میں سرخرو ہوئے ہیں اور اللہ کی مدد سے دوبارہ سرخرو ہوں گے۔

50% LikesVS
50% Dislikes