کنزرویٹیو فرینڈز آف پاکستان کی کاوشوں سے پاک برطانیہ تعلقات میں مثبت پیش رفت خوش آئیند ہے؛ شاہ محمود

لندن (اکرم عابد) پاک برطانیہ تعلقات کی مضبوطی اور بہتر تعلقات کار کیلئے کنزرویٹیو فرینڈز آف پاکستان نے دونوں ممالک کی اہم شخصیات کی ورچوئیل کانفرنس کا اہتمام کیا جس میں پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو خصوصی خطاب کی دعوت دی گئی۔
کنزرویٹو فرینڈز آف پاکستان کے چیئرمین لارڈ ضمیر چوہدری سی بی ای، ستارہ امتیاز پاکستان نےکانفرند کا آغاز کیا اور پاکستانی کمیونٹی برطانیہ میں جن کی تعداد 1.5ملین ہے، کنزرویٹو پارٹی اور پاکستان کے درمیان مضبوط، وسیع تر اور گہرے تعلقات قائم کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

وزیر خارجہ نے اپنے خطاب میں پاک برطانیہ تعلقات استوار کرنے کے حوالے سے پاکستانی کمیونٹی کے کردار کی اہمیت پر روشنی ڈالی اور دونوں ملکوں کے دوران تعلقات میں مثبت پیش رفت پر خوشی کااظہار کیا،انھوں نے کورونا کی وجہ سے عالمی معیشت پر پڑنے والے اثرات پر روشنی ڈالتے ہوئے اور اس وبا سے نمٹنےاور اسے پھیلنے سے روکنے کیلئے پاکستان کے اقدامات خاص طورپر اسمارٹ لاک ڈائون کی پالیسی پر روشنی ڈالی،وزیر خارجہ نے ترقی پذیر ممالک پر کورونا وائرس کے اثرات اور اس کے پیش نظر وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے قرضوں میں چھوٹ کیلئے عالمی اقدامات کے مطالبے سے شرکا کو آگاہ کیا انھوں نے برٹش پاکستانیوں کی وطن کیلئے خدمات کی تعریف کی اور کورونا کے خلاف لڑتے ہوئے جان دینے والوں کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا۔

وزیر خارجہ نے اس موقع پر شرکا کو بھارت کے زیر قبضہ جموں وکشمیر میں بھارت کی جانب سے حقوق انسانی کی منظم خلاف ورزیوں ،بھارت کی جانب سے مقبوضہ وادی کی ڈیموگرافک ہیئت تبدیل کرنے کی کوششوں اور بھارت کے جنگی جنون کی وجہ سے امن وسلامتی کیلئے پیداہونے والے خطرات سے بھی آگاہ کیا۔

انھوں نے بھارت کو حقوق انسانی کی بدترین خلاف ورزیوں سے روکنے اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرار دادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر حل کرنے کیلئے بھارت پر فوری دبائو ڈالنے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔

کانفرنس میں بڑی تعداد میں برطانوی وزرا ،ارکان پارلیمنٹ اور برٹش پاکستانی کمیونٹی کے عمائدین نے شرکت کی جن میں پاکستان ہائی کمشنر معظم خان، کنزرویٹیو فرینڈز آف پاکستان کے ڈائیریکٹر سید قمر رضا، برطانوی وزیر مملکت برائے کامن ویلتھ اینڈ یونائیٹڈ نیشنز لارڈ طارق احمد و دیگر شامل تھے۔

50% LikesVS
50% Dislikes