پاک آرمی نے برطانیہ میں ہونے والا پیس اسٹکنگ مقابلہ مسلسل تیسرے سال بھی جیت لیا

لندن (عمران راجہ) افواج پاکستان کی صلاحیتوں کا سارا زمانہ معترف ہے یہی وجہ ہے کہ اقوام متحدہ کے زیراہتمام جہاں کہیں امن مشن بھیجنا ہو افواج پاکستان کی خدمات ترجیحی بنیادوں پر لی جاتی ہیں۔ اسی طرح جنگی مشقوں کے مقابلوں میں بھی افواج پاکستان کے بہادر سپاہیوں نے وطن کا پرچم ہمیشہ بلند رکھا۔
اس سال برطانوی کیڈٹ اکیڈمی سینڈہرسٹ میں منعقدہ فوجی ڈرل کا مقابلہ بھی پاکستان نے جیت لیا ہے واضع رہے یہ مسلسل تیسرا سال ہے جب پاکستان نے یہ مقابلہ جیتا۔

رائل ملٹری اکیڈمی سینڈہرسٹ یوکے میں ہونے والا انٹرنیشنل پیس اسٹکنگ مقابلے ڈرل، ٹرن آئوٹ اور ڈسپلن کے اعلیٰ ترین معیار کا مظاہرہ کرتے ہوئے پاکستان ملٹری اکیڈمی نے مسلسل تیسرے سال یہ مقابلہ جیتا۔ مقابلے میں 9 ٹیموں نے حصہ لیا تھا۔

اس موقع پر مبارکباد دیتے ہوئے پاکستان ہائی کمشنر لندن معظم خان نے کہا کہ پاکستانی ٹیم نے ایک بار پھر ہماری مسلح افواج کی پیشہ ورانہ مہارت اور اعلیٰ کارکردگی کے بہترین معیار کا ثبوت پیش کیا ہے۔
پیس اسٹکنگ مقابلہ 1928 سے برطانیہ میں منعقد ہو رہا ہے، جس کی تاریخ آرٹلری کی رائل رجمنٹ سے منسلک ہے۔

بعد ازاں ان کیڈٹس کو پاکستان ہائی کمیشن میں دعوت دی گئی جہاں انکی کارکردگی کو خراج تحسین پیش کیا گیا۔ اس موقع پر پاکستان ہائی کمشنر معظم خان نے فاتح کیڈٹس کو اعزازی شیلڈز بھی پیش کیں جس پر پاک آرمی کے جوانوں نے شکریہ ادا کیا۔

50% LikesVS
50% Dislikes