2019 کے برطانوی انتخابات میں روس نے اثر انداز ہونے کی کوشش کی: برطانوی وزیر خارجہ – Kashmir Link London

2019 کے برطانوی انتخابات میں روس نے اثر انداز ہونے کی کوشش کی: برطانوی وزیر خارجہ

لندن (کشمیر لنک نیوز) وزیر خارجہ ڈومینک راب نے الزام لگایا ہے کہ روس نے گذشتہ سال ہونے والی برطانوی انتخابات میں اثر انداز ہونے کی کوشش کی تھی۔
حکومتی ترجمان کا کہنا ہے کہ 2019 کے انتخابات میں روس نے یقینی طور پر غیر قانونی طور پر حاصل کی گئی دستاویزات کے ذریعے مداخلت کرنے کی کوشش کی تھی۔
برطانوی وزیر خارجہ ڈومینک راب کا کہنا ہے کہ امریکہ اور برطانیہ کے درمیان تجارتی مذاکرات کی دستاویزات انٹرنیٹ پر جاری کی گئیں اور جن کو لیبر پارٹی نے اپنی انتخابی مہم میں استعمال کیا۔

برطانوی وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ یہ دستاویز2019 کے انتخابات سے قبل ناجائز ذرائع سے حاصل کی گئی اور سوشل میڈیا کے پیلٹ فارم ریڈ اٹ کے ذریعے عام کی گئی اور جب یہ عوامی توجہ حاصل نہ کر سکی تو انتخابات سے قبل یہ کوشش کی گئی کہ ناجائز طریقوں سے حاصل کی گئی دوسری دستاویزات کو پھیلایا جائے۔
انکا یہ بھی کہنا ہے کہ اس معاملے کی تحقیقات کرائی جا رہی ہیں کہ کس طرح یہ دستاویز منظر عام پر آئیں۔
وزیرخارجہ کا مزید کہنا تھا کہ برطانوی عام انتخابات میں وسیع پیمانے پر روس کی مداخلت کے بارے میں کوئی ثبوت موجود نہیں ہیں لیکن ملک کے جمہوری نظام میں کسی قسم کی مداخلت بھی ناقابلِ قبول ہے۔
یہ پہلا موقع ہے کہ برطانوی حکومت نے وثوق کے ساتھ روس کی طرف سے برطانیہ کے جمہوری نظام میں مداخلت کا اعتراف کیا ہے۔ اس سلسلے میں مداخلت کے بارے میں الزامات پر کافی عرصے سے تاخیر کا شکار تفصیلی رپورٹ اگلے ہفتے جاری ہونے کی توقع ہے۔
برطانوی حزب اختلاف لیبر پارٹی نے کہا ہے کہ وہ روس یا کسی دوسری بیرونی طاقت کی طرف سے ملک کے جمہوری نظام میں مداخلت کی کوششوں کی مذمت کرتی ہے۔