مڈلینڈز پارٹنر شپ این ایچ ایس فائونڈیشن ٹرسٹ کے وفد کا پاکستان ہائی کمیشن لندن کا دورہ – Kashmir Link London

مڈلینڈز پارٹنر شپ این ایچ ایس فائونڈیشن ٹرسٹ کے وفد کا پاکستان ہائی کمیشن لندن کا دورہ

لندن (اکرم عابد) کووڈ19 ایک عالمی چیلنج ہے اور اس سے نمٹنے کے لئے عالمی تعاون کی ضرورت ہے۔ دلیر این ایچ ایس ڈاکٹروں اور ہیلتھ ورکرز نے وبا سے لڑنے اور انسانیں بچانے کے لئے ہیرو جیسا کردار ادا کیا جس پر وہ بجا طور پر خراج تحسین کے مستحق ہیں۔
ان خیالات کا اظہار پاکستان ہائی کمشنر نفیس زکریا نے مڈلینڈز پارٹنر شپ این ایچ ایس فائونڈیشن ٹرسٹ کے ایک وفد ملاقات میں کیا، وفد نے اپنے چیف ایگزیکٹیو نیل کیر کی قیادت میں پاکستان ہائی کمیشن پر ملاقات کی تھی۔ وفد میں میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر عابد خان اور ایسوسی ایٹ میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر محمد گل بھی شامل تھے۔
دونوں جانب سے وبا کوویڈ۔19 کے پھیلائو کی صورت حال اور دونوں ممالک کے فرمیان مستقبل میں صحت کے شعبہ میں تعاون پر تبادلہ خیالات کیا گیا۔
پاکستان ہائی کمشنر نے وبا کے دوران برٹش پاکستانی میڈیکل پروفیشنلز کے شاندار کام اور دی جانے والی قربانیوں کو بھی سراہا۔ انہوں نے پاکستان میں وبا کے بحران سے پیدا ہونے والی صورت حال پر وفد کو بریفنگ بھی دی۔ انہوں نے ابتدائی طور پر وائرس کے پھیلائو کو چیک کرنے کے اقدامات ، انفیکشن میں مبتلا افراد اور ملک میں اس کی وجہ سے ہونے والی اموات پر روشنی ڈالی۔ ہائی کمشنر نے بتایا کہ پی پی ای کی بڑھتی ہوئی عالمی طلب کو دیکھتے ہوئے پاکستان نے بیرونی دنیا بالخصوص برطانیہ کو اس کٹیگری کے آلات ایکسپورٹ کرنے کی صلاحیت حاصل کر لی ہے۔


پاکستان ہائی کمشنر نے بتایا کہ پاکستان اب ماسکس بشمول این95 ماسکس ، گلوز ، گوگلز ، فیس شیلڈ ( وائزورز)، گائون ، شوز کورز، ہینڈ سینی ٹائزر ، کانٹیکٹ لیس تھرمامیٹر اور بین الاقوامی معیار کی ہاسپیٹل بیڈ شیٹ ایکسپورٹ کر رہا ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ان پاکستانی پروڈکٹس کے بعض نمونے برطانیہ میں اہم اداروں اور خریاداروں سے شیئر کئے گئے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ پاکستان انجنیئرنگ کونسل اور وزارت سائنس و ٹیکنالوجی نے انٹرنیشنل ایکسپورٹ کے معیارات کے مطابق اعلیٰ معیاری وینٹی لیٹرز بھی تیار کر لئے ہیں۔
اس موقع پر ہائی کمشنر نے چیف ایگزیکٹیو کو اظہار خیرسگالی کے طور پر سی ای سرٹیفائیڈ پاکستانی ساختہ ذاتی تحفظ کے آلات ( پی پی ای ) فیس شیلڈ پیش کئے۔
برطانوی وفد کے سربراہ نے دوطرفہ تعلقات کو فروغ دینے کے لئے ہائی کمشنرکی سوچ وبچار اور کوششوں کی تعریف کی۔ انہوں نے مستقبل میں بھی ٹرسٹ اور پاکستان میں شعبہ صحت کے درمیان تعلقات کو فروغ دینے کی کوششوں کی یقین دہانی کرائی۔

پاکستان بریٹین بزنس کونسل کے چیئرمین جولین ہیملٹن نے بھی اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے پی پی ای کیٹیگری کے طبی آلات کی برآمدات میں خاطر خواہ کامیابی حاصل کرلی ہے۔
مہمانوں کی پاکستانی آموں سے تواضع بھی کی گئی۔