لندن؛ سابق وزیراعظم نواز شریف کی تازہ ترین میڈیکل رپورٹس کورٹ میں پیش – Kashmir Link London

لندن؛ سابق وزیراعظم نواز شریف کی تازہ ترین میڈیکل رپورٹس کورٹ میں پیش

لندن (کشمیر لنک نیوز) برطانیہ میں علاج کی غرض سے مقیم سابق وزیراعظم پاکستان نوازشریف کی تازہ ترین طبی رپورٹ پاکستانی عدالت میں جمع کرادی گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ جبتک کرونا کیوجہ سے ہسپتال صحیح طور پر کھلتے نہیں اور جبتک نواز شریف کرونا صورتحال میں مکمل محفوظ نہیں، تب تک نواز شریف کا cardiac procedure یا آپریشن نہیں ہو سکتا۔
نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے یہ رپورٹیں اپنی تویٹ کے ذریعے شیئر بھی کی ہیں جس کے مطابق سابق وزیر اعظم پلیٹ لیٹس، شوگر، دل، گردے اور ہائی بلڈ پریشر کے امراض میں مبتلا ہیں، ڈاکٹروں نے کورونا کے باعث گھر سے باہر نکلنے سے روک رکھا ہے۔


پاکستان میں میاں نواز شریف کے وکیل امجد پرویز نے میڈیکل رپورٹس لاہور ہائی کوٹ رجسٹرار آفس میں جمع کروائیں۔
ان رپورٹس کے مطابق نواز شریف پلیٹ لیٹس، شوگر، دل، گردے،ہائی بلڈ پریشر کے امراض میں مبتلا ہیں، کورونا کے دوران باہر نکلنا انکے لئے جان لیوا ثابت ہو سکتا ہے۔
کارڈیو سرجن ڈاکٹر ڈیوڈ لارنس کی طرف سے جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ کورونا کے دوران نواز شریف کو انتہائی محتاط رہنے کی ضرورت ہے، ڈاکٹرز نواز شریف کی صحت سے ہر وقت آگاہ ہیں، ان کے دل کو خون کی مناسب سپلائی نہیں ہو رہی ہے۔
امجد پرویز ایڈووکیٹ کا کہنا ہے کہ کہ نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس 4 دسمبر، 15 دسمبر 2019ء کو بھی عدالتی ریکارڈ کا حصہ بنایا جا چکا ہے، جبکہ اس سال 13 جنوری، 12 فروری، 18 مارچ اور 28 اپریل2020 ءکو بھی نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس ہائیکورٹ میں جمع کروائی جا چکی ہیں۔