سنی جمعیت عوام برطانیہ کے زیراہتمام شمالی مغربی انگلینڈ میں سنی کنونشن کا انعقاد – Kashmir Link London

سنی جمعیت عوام برطانیہ کے زیراہتمام شمالی مغربی انگلینڈ میں سنی کنونشن کا انعقاد

بریڈفورڈ (کشمیر لنک نیوز) سنی جمعیت عوام برطانیہ کے زیراہتمام نارتھ ویسٹ میں سنی کنونشن کا انعقاد کیا گیا جس کی صدارت پیر سید محمد عرفان شاہ مشہدی نے کی۔کنونشن میں برطانیہ بھر سے علما کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی.

اس موقع پر پیر سید محمد عرفان شاہ مشہدی نے صدارتی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کہ ایمان اور اعمالِ صالحہ لازم و ملزوم ہیں، مسلمان صرف اعتقادیت کا نام نہیں بلکہ مومن اورمسلم کو ایک روشن کردار کا مالک اور پختہ سیرت وکردار کا حامل ہونا چاہئے، انہوں نے کہا کہ ہمارے گرد و پیش تیزی سے جو حالات رونما ہو رہے ہیں،انکی نزاکت اور سنگینی اس امر کی متقاضی ہے کہ ہم اپنے درمیان سے نفرت، بغض، نفاق اور انتشار و افتراق کا قلع قمع کرکے باہمی محبت ،اخوت و یگانگت، یک جہتی اور اتحاد بین المسلمین کو فروغ دینے کی ہر ممکن سعی کریں، اسی میں ہماری بقا اور فلاح و نجات مضمر ہے، ہمیں برطانیہ یورپ اور پوری دنیا میں محبت ، اخوت اور صحابہ کرام کی عزت مقام و مرتبے اور تعلیمات کو عام کرتے ہوئے انسانی قدروں کا وہی درس دینے کی ضرورت ہے جس پر چلتے ہوئے نوجوان نسل دیگر اقوام میں ایک پُل کا ایسا کردار ادا کر سکیں جہاں نفرت حقارت بد عملی اور بے راہ روی کا دور دور تک کوئی نام ونشان نہ رہے.

پیر عرفان شاہ مشہدی نے نوجوان نسل کے دینی اور روحانی علوم کے حصول پر زور دیتے ہوئے کہا کہ آج تک کوئی بھی قوم علم حاصل کئے بغیر ترقی و خوشحالی حاصل نہیں کر سکی ۔ اس لئے ضرورت اس امر کی ہے کہ اعلیٰ تعلیم کے حصول کے ساتھ دیگر اقوام کو بھی دینی دھارے میں قریب کرنے کیلئے اختلافی امور سے بچتے ہوئے اسلام کے زریّں اصولوں کو اس قدر اجاگر کیا جائے کہ لوگ ہم پر فخر کر سکیں اور نفرت حقارت اور ایک دوسرے سے دوری کا باب بند ہو سکے، اس موقع پر سنی جمعیت عوام کے چئیرمین معین اقبال عرفانی کو جماعت کے لیے ان کی خدمات پر خصوصی ایوارڈ دیا گیا، کنونشن کے شریک علماء نے پیر سید محمد عرفان شاہ مشہدی کو تحفظ ناموس رسالت ، صحابہ کرام اور اہلبیت اطہار کے لیے ان کے قائدانہ کردار پر شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا اور ان کے مشن کے ساتھ شانہ بشانہ چلنے کے عزم کا اظہار کیا.

کنونشن میں برطانیہ بھر سے جیّد علماوالمشائخ جن میں علامہ سید سلطان مشہدی ،مفتی بشیر چشتی ، مفتی فضل قیوم سبحانی ، پیر سید ازکیٰ جلال الدین شاہ مشہدی ،مولانا عقیل جلالی ،شیخ رضوان چشتی ،مولانا ساجد شامی ،مولانا نبیل افضل ،علامہ قاری علی اظہر ،مولانا امام عاصم ،امام عادل شہزاد،شہزاد احمد قادری پیر شیخ عمران ابدالی ،علامہ مفتی بشیر طاہر، علامہ قاری علی اظہر، حافظ محمد مقصود ،قاری عیسیٰ خان نوشاہی ،مولانا حافظ محمد خان ،قاری شمریز چشتی ،قاری صدام چشتی ،مفتی واجد اقبال ، سید عبدالقادر جیلانی ،خواجہ پیر صوفی اکرم نقشبندی ،سیدعابد علی شاہ ،کونسلر جاوید اقبال ،علامہ حیات مجددی،قاری اشرف قادری ،مولانا سید الطاف شاہ ،سید ابوبکر شاہ ،حافظ عبدالرزاق،حافظ محمد اعظم ، مختار قادری ،مولانا شہباز ،قاری زاہد شریف رضوی،مولانا سہیل عرفانی ،علامہ شاہوال احمد ہاشمی ،مولانا عمران عرفانی، قاری خالد محمود شیرازی ، علامہ قاری حفیظ الرحمٰن چشتی ،حافظ فرید چشتی ،مولانا محمد فاضل ،علامہ شفیق الاسلام ،قاری وسیم سعیدی ،مولانا محمد بخش ،صاحبزادہ عبدل مناف ،حافظ عثمان عرفانی ،قاری محمد حفیظ ،حافظ محمد ریاض ،علامہ اشرف چشتی ،محمد فیضان عرفانی ، قاری عبدالقیوم الفت نوشاہی،خلیفہ شاہد حسین عرفانی ،خلیفہ صوفی منیر حسین عرفانی ،خلیفہ فیصل ایاز عرفانی ،خلیفہ حافظ اسد ایاز عرفانی ،خلیفہ چوہدری رمضان عرفانی ،خلیفہ حماد مختار عرفانی ،نعیم اقبال عرفانی اور دیگر نے شرکت کی، آخر میں پیر سید محمد عرفان شاہ مشہدی نے امت مسلمہ کے اتحاد واتفاق کشمیر اور فلسطین کی آزادی کے لیے خصوصی دعا کی ۔

50% LikesVS
50% Dislikes