برٹش پاکستانی میاں بیوی پر تشدد اور خاتون کے قتل کے الزام میں ایک شخص گرفتار – Kashmir Link London

برٹش پاکستانی میاں بیوی پر تشدد اور خاتون کے قتل کے الزام میں ایک شخص گرفتار

بریڈفورڈ (کشمیر لنک نیوز) شمال مغربی انگلینڈ کے علاقے نیلسن میں مقیم پاکستان نژاد برٹش خاتون 52 سالہ عشرت احمد کو تشدد کے بعد قتل کرنے کے الزام میں ایک 58سالہ شخص کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ مقتولہ کے شوہر 55سالہ آفاق احمد زخمی ہونے کے سبب ہسپتال میں داخل ہیں۔ پولیس نے گرفتار شخص سے پوچھ گچھ کا آغاز کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اتوار کی شب 10بجے کے قریب رابرٹس اسٹریٹ پر واقع گھر میں گڑبڑ کی اطلاع پر پولیس طلب کی گئی تھی، جہاں عشرت احمد اور آفاق احمد سر پر چوٹوں کے سبب شدید زخمی حالت میں ملے۔ لنکاشائر پولیس کے مطابق دونوں کو فوری طور پر رائل پریسٹن ہاسپٹل پہنچایا گیا لیکن عشرت احمد زخموں کی تاب نہ لاکر پیر کی شام انتقال کر گئیں۔ جبکہ آفاق احمد بدستور ہسپتال میں ہیں جہاں ان کی حالت سنگین لیکن خطرے سے باہر ہے۔

پولیس نے واردات کے کچھ دیر بعد ہی ایک 58 سالہ شخص کو گرفتار کیا جس سے قتل اور اقدام قتل کے حوالے سے پوچھ گچھ کا سلسلہ جاری ہے۔ منگل کو مجسٹریٹ نے پولیس کو پوچھ گچھ کیلئے اضافی وقت بھی دیا۔ مقتول عشرت احمد کے بچوں نے پولیس کے ذریعے جاری اپنے پیغام میں کہا ہے کہ ان کی والدہ انتہائی رحم دل اور پیاری تھیں اور ہم سب سے یکساں پیار کرتی تھیں۔ ہمارے دل ٹوٹے ہوئے ہیں لیکن دنیا کی سب سے بہترین والدہ کی یادیں ہمیشہ ہمارے دلوں میں رہیں گی۔

عشرت احمد کے بھتیجے طارق مشتاق نے کہا ہے کہ اس خوفناک سانحہ نے خاندان کو تباہ کر دیا ہے۔ وہ یہ سمجھنے کی کوشش کر رہے ہیں کہ آخر ہوا کیا ہے۔ انہوں نےکہا کہ ان کے انکل آفاق احمد کار مکینک تھے اور جوڑے کو کمیونٹی میں انتہائی قدر کی نگاہ سے دیکھا جاتا تھا، مقامی افراد کے مطابق جوڑےکا تعلق گجرات سے تھا، ان کا تعلق بٹ فیملی سے تھا اور اس سانحہ کے بعد پورے علاقے کی فضا سوگوار ہے۔ ڈیٹکیٹو چیف انسپکٹر ال ڈیوس نے کہا کہ انصاف کے حصول کو یقینی بنایا جائے گا اور فیملی لیژران آفیسرز، غمزدہ خاندان کو سپورٹ کر رہے ہیں۔ انہوں نے کمیونٹی سے یہ اپیل بھی کی کہ وہ افواہوں اور قیاس آرائیوں کو خصوصاً سوشل میڈیا پر شیئر کرنے سے گریز کریں۔

50% LikesVS
50% Dislikes