برطانیہ کے ارب پتی مسلمان بھائیوں کو انگلینڈ کی عظیم الشان مسجد بنانے کی اجازت مل گئی – Kashmir Link London

برطانیہ کے ارب پتی مسلمان بھائیوں کو انگلینڈ کی عظیم الشان مسجد بنانے کی اجازت مل گئی

بلیک برن (محمد فیاض بشیر) بلیک برن ایڈ ڈارون کونسل نے دو مسلمان بھائیوں کی جانب سے تمام تر معاملات کے حل کی یقین دہانی کے بعد انہیں عظیم الشان مسجد کی تعمیر کی اجازت دے دی ہے۔
عیسیٰ برادرز ناصرف بلیک برن بلکہ برطانیہ بھر میں مسلم کمیونٹی کی پہچان بن چکے ہیں جنہوں نے اپنے بزنس کا آغاز 2001 میں صرف ایک پٹرول پمپ سے کیا تھا۔

اب یہی بھائی برطانیہ کے ارب پتی افراد میں شامل ہیں جنہیں بلیک برن میں عالیشان مسجد بنانے کی اجازت مل گئی جو پانچ ملین پائونڈز کی لاگت سے تیار ہوگی۔ یہ رقم پاکستانی کرنسی میں ایک ارب روپے سے زائد بنتی ہے۔

مقامی انتظامیہ کی جانب سے مسجد کے میناروں سے آنے والی آوازوں سمیت 21 اعتراضات کو حل کرنے کے بعد مسلمان بھائیوں کے ادارے عیسیٰ فائونڈیشن کو یہ اجازت ملی ہے۔ واضع رہے عیسیٰ فانڈیشن نے مسجد کے قریب پارکنگ بنانے اورسمیت حفاظتی انتظامات کیلئے 30 ہزار پانڈ دینے کا بھی وعدہ کیا ہے۔
کونسل کے سربراہ نے کہا کہ مسجد تیارہونے کے بعد بلیک برن کی جدید شکل ہوجائے گی جس سے سب کوایسا ضرورلگے گا کہ یہ شہرمختلف کمیونیٹیزکے رہنے والوں کا مسکن ہے۔

برطانیہ میں پیٹرول سٹیشنز کے کاروبار سے پیسہ بنانے والے ارب پتی بھائیوں محسن اور زبیر عیسیٰ کو اس وقت شہرت ملی جب انہوں نے برطانیہ کی سب سے بڑی مارکیٹ چینز میں سے ایک ایسڈا کو چھ اعشاریہ آٹھ ارب پاؤنڈ میں خرید ا تھا۔

دی سنڈے ٹائمز کے مطابق ان بھائیوں کی جائیداد کی کل مالیت 3 اعشاریہ 56 ارب پاؤنڈ ہے۔
عیسیٰ برادران یورو گیراجز نامی کمپنی کے مالک ہیں جس کے 5 ہزار 200 سے زیادہ پیٹرول سٹیشنز اور 33 ہزار سے زیادہ ملازمین ہیں۔ ان پیٹرول سٹیشنز میں سے زیادہ تر یورپ اور امریکہ میں ہیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes