پاکستان نے جوہری ٹیکنالوجی کے پرامن استعمال میں متاثر کن پیش رفت کی ہے؛ ویانا میں سفیر پاکستان کا خطاب – Kashmir Link London

پاکستان نے جوہری ٹیکنالوجی کے پرامن استعمال میں متاثر کن پیش رفت کی ہے؛ ویانا میں سفیر پاکستان کا خطاب

ویانا (کشمیر لنک نیوز) حکومت پاکستان کی جانب سے انٹرنیشنل اٹامک انرجی ایجنسی (IAEA) کے ہیڈ کوارٹر میں پاکستان ایمبیسی آسٹریا نے ریڈیو ایکٹیویسٹ مینجمنٹ پر بین الاقوامی کانفرنس کا انعقاد کیا، اقوام متحدہ کے اداروں میں پاکستان کے مستقل نمائندے آسٹریا میں پاکستان کے سفیر آفتاب احمد کھوکھر نے تقریب سے خطاب میں کہا کہ تابکار فضلے کا محفوظ انتظام بنیادی اہمیت کا حامل ہے تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ ہمارے معاشرے اس کے نقصان دہ پہلوؤں سے محفوظ رہتے ہوئے ایٹمی تابکاری کے پُرامن استعمال سے مستفید ہوتے رہیں۔

سفیر پاکستان کا کہنا تھا کہ پاکستان نے جوہری ٹیکنالوجی کے پرامن استعمال میں متاثر کن پیش رفت کی ہے اور جوہری اور تابکاری کے تحفظ کے اعلیٰ ترین معیارات پر پوری طرح عمل پیرا ہے۔ محمد نعیم چیئرمین پاکستان اٹامک انرجی کمیشن (PAEC)جو( IAEA )کانفرنس کے شریک چیئرمین ہیں، نے کہا کہ پاکستان کے پاس تابکار فضلہ کے مربوط نظام پر عمل کرنے کا 50 سال سے زیادہ کا تجربہ ہے اور وہ اسے ٹھکانے لگانے کے مستقل حل کی جانب پیش رفت کر رہا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کا ریڈیو ایکٹیو ویسٹ مینجمنٹ انفرااسٹرکچر پائیدار قومی جوہری توانائی پروگرام کے پاکستان کے مستقبل کے منصوبوں کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل ہوگا۔ آئی اے ای اے اور پیس ماہرین کی پیشکشوں نے (IAEA) اور پاکستان کے درمیان تکنیکی تعاون کے پروگرام کے فریم ورک کے اندر تابکار فضلہ کے انتظام میں پاکستان کی طرف سے کی گئی پیش رفت کو اجاگر کیا۔

کانفرنس میں سائنسی ماہرین، آئی اے ای اے کے حکام اور بین الاقوامی مندوبین نے شرکت کی جنہوں نے پریزنٹرز کے ساتھ باہمی تبادلہ خیال کیا۔ ایک ہفتہ تک جاری رہنے والی ( IAEA ) کانفرنس کا مقصد جوہری ایپلی کیشنز کے پرامن استعمال سے پیدا ہونے والے تابکار فضلہ کے انتظام میں معلومات کے تبادلے اور بہترین طریقوں کو فروغ دینا ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes