جامعہ علویہ بولٹن کے بانی علامہ صابر علی صابر کی’والدین اور اولاد‘کے موضوع پہ لکھی گئی کتاب کی تقریب رونمائی – Kashmir Link London

جامعہ علویہ بولٹن کے بانی علامہ صابر علی صابر کی’والدین اور اولاد‘کے موضوع پہ لکھی گئی کتاب کی تقریب رونمائی

بولٹن (کشمیر لنک نیوز) جامعہ علویہ بولٹن کے بانی و منتظم اعلیٰ معروف عالم دین علامہ صابر علی صابر نے ’والدین اور اولاد‘ کے موضوع پہ کتاب تصنیف کی اور اپنے ادارے میں تقریب رونمائی کا انعقاد کیا جہاں جید علمائے کرام اور کثیر عوام نے شریک ہوکر محفل کی رونق دوبالا کی۔

والدین اور اولاد کے باہمی تعلق پہ کئی کتابیں مختلف زبانوں میں لکھی جا چکی ہیں مگر اردو زبان میں یہ کتاب اپنی مثال آپ ہے علمائے کرام کا کہنا تھا کہ اس کتاب میں نہ صرف والدین کی عظمت کو بیان کیا گیا ہے بلکہ اولاد کے حقوق بھی تفصیل سے بیان کئے گئے ھیں تاکہ والدین جہاں حسن سلوک کے مستحق ہیں وہاں اپنی اولاد کی تربیت بھی احسن انداز میں کریں تاکہ معاشرے میں خیر کے رنگ اجاگر ہوں۔

علامہ محمد سجاد رضوی نے عالم اسلام کی علمی خدمات کے ضمن میں کتابی اثاثے اور تحقیقی کام کے پس منظر کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ اسلام نے ہمیشہ علم قلم اور کتاب کی اہمیت واضح کی ھے اور آنحضرت ﷺ کے دور سے آج تک مسلمانوں نے تحریری کام اور تحقیقی موضوعات پہ خصوصی توجہ دی ہے یہ کتاب بھی اسی سلسلے کی کڑی ھے اور اپنے وجود میں بہترین سرمایہ ہے جسے ہر دور میں قدر کی نگاہ سے دیکھا جاتا رہے گا۔ قر آن مجید نے جہاں سینکڑوں مرتبہ علم اور اس کی فروعات کا ذکر کیا وہاں آلات علم یعنی قلم کاغذ اور کتاب کےلئے بھی مختلف پیرائے استعمال فرمائے جس سے اندازہ کیا جاسکتا ہے کہ دین اسلام کی علم کے ساتھ وابستگی کس قدر مستحکم ہے مزید براں پہلی وحی قران اس پہ روشن دلیل ہے۔ علامہ صابر علی صابر صاحب نے اپنی اس تحریر میں تحقیق و تصنیف کا حق ادا کیا ھے اور اسے سہل انداز میں پیش کرکے موجود اور آنے والی نسلوں کی بھلائی اور اصلاح کا ذریعہ بنایا ہے ۔

علامہ قاری محمد طیب نقشبندی نے اپنے بیان میں کہا کہ علامہ صابر علی صابر صاحب نے اس سلسلے میں بہترین کاوش کرتے ہوئے عالمِ اسلام کےلئے مفید کتاب تحریر کی جو کئی وجوہ سے انفرادی حیثیت رکھتی ہے جہاں والدین کی عظمت کو بیان کیا گیا ھے وہاں ضروری مسائل کا حل اور معاشرتی غلط فہمیوں کا ازالہ بھی اس کتاب کا حصہ ہیں۔ صاحب تصنیف نے والدین کے حقوق کے ساتھ ساتھ اولاد کے حقوق بھی شرح و بسط سے درج کرکے اس کتاب کو مزید معتبر بنا دیا ہے نیز آنحضرت ﷺ کی شان و عظمت بھی ایسے خوبصورت انداز میں رقم کی ھے کہ حسنِ بیاں نکھر گیا ہے۔

علامہ صابر علی صابر جو اس سے قبل بھی عظیم تصنیفی کام کر چکے ہیں نے اپنے اظہار تشکر کے کلمات میں جہاں رب ذوالجلال کی توفیقِ خاص کا ذکر کیا وہاں علماء اسلام کی کاوشوں کو بھی سراہا اور بالخصوص جو اہل علم اس محفل میں شریک ہوئے ان کا شکریہ ادا کیا نیز اس تصنیف کے حوالے سے اپنے تجربات اور مختلف مراحل میں کی گئی جد و جہد سے حاضرین کو آگاہ کرتے ہوئے’اس کاوش کو اللہ تعالی کے فضلِ خاص‘ پیغمبر علم و رحمت ﷺ کی نگاہِ عنایت اور اساتذہ و والدین کی توجہات کا نتیجہ قرار دیا اور حاضرین کو خوشخبری سنائی کہ جلد ہی اس کتاب کا انگریزی ترجمہ بھی پرنٹ ہو کر مارکیٹ میں پہنچنے والا ہے تاکہ انگلش پڑھنے والا طبقہ بھی اس سے مستفید ھو سکے۔

50% LikesVS
50% Dislikes