نفرت اور بغض کے شکار امریکی ملزم کو عبادتگاہیں جلانے کے جرم میں عمر قید کی سزا – Kashmir Link London

نفرت اور بغض کے شکار امریکی ملزم کو عبادتگاہیں جلانے کے جرم میں عمر قید کی سزا

کیلیفورنیا (کشمیر لنک نیوز) مسلمانوں اور یہودیوں کی عبادتگاہوں کو آگ لگانے والے امریکی کو عمر قید کی سزا سنادی گئی، امریکی اٹارنی جنرل میرک گارلینڈ کے مطابق کیلیفورنیا کے ایک شخص جون ارنسٹ کو سنہ 2019 میں ایک یہودی عبادت گاہ اور مسجد پر حملہ کرنے کے جرم میں عمر قید کی سزا سنائی گئی ہے۔ دوران تفتیش یہ بات بھی سامنے آئی کہ جان ارنسٹ نامی شخص نے عبادت گاہ میں مزید لوگوں کو مارنے کا منصوبہ بنایا تھا لیکن اس کی خودکار رائفل جام ہو گئی تھی۔

جان ارنسٹ نے 24 مارچ 2019 کو کیلیفورنیا کے علاقے اسکونڈیڈو میں دارالارقم نامی مسجد کو آگے لگانے کا اعتراف بھی کیا۔ جب مسجد کو آگ لگائی گئی اس وقت وہاں سات افراد سو رہے تھے تاہم کوئی زخمی نہیں ہوا۔ اس نے 27 اپریل 2019 کو پووے میں یہودیوں کی عبادت گاہ میں داخل ہو کر فائرنگ کی جس سے ایک خاتون ہلاک اور تین افراد زخمی ہوئے۔ میڈیا کو بتایا گیا کہ جان ارنسٹ نے دونوں کارروائیاں مسلمانوں سے نفرت اور عمارات کے مذہبی کردار کے باعث کیں۔

ارنسٹ کو 113 جرائم کا مرتکب ٹھہرایا گیا ہے جن میں سے 54 نفرت انگیزی، 55 آگ لگانے اور چار آتشیں اسلحے سے حملے شامل ہیں۔امریکی اٹارنیکا یہ بھی کہنا تھا کہ اس ملک کے تمام لوگوں کو بغیر کسی حملے کے خوف کے آزادانہ طور پر اپنے مذہب کے تحت زندگی گزارنے کے قابل ہونا چاہیے۔ان کے مطابق یہ بھیانک جرم ہماری قوم کے بنیادی اصولوں پر حملہ تھا۔ محکمہ انصاف نفرت انگیزی کی کارروائیوں کا مقابلہ کرنے اور نفرت پر مبنی تشدد کے مرتکب افراد کو جواب دہ ٹھہرانے کے پرعزم ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes