سکاٹ لینڈ میں سابق وزیراعظم پاکستان عمران خان کے حق میں احتجاجی مظاہرے، خواتین کی بڑی تعداد میں شرکت – Kashmir Link London

سکاٹ لینڈ میں سابق وزیراعظم پاکستان عمران خان کے حق میں احتجاجی مظاہرے، خواتین کی بڑی تعداد میں شرکت

ایڈنبرا (کشمیر لنک نیوز) جب سے وزیراعظم عمران خان کی حکومت کو اندرونی اور بیرونی سازش کے تحت ہٹایا گیا تب سے پاکستان تحریک انصاف کے سپورٹرز اور عام پڑھے لکھے شہریوں نے ایک احتجاج کا سلسلہ نا صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں جاری رکھا ہوا ہے۔سکاٹ لینڈ بھر کے مختلف شہروں میں تقریباً ہر روز کہیں نہ کہیں احتجاجی مظاہرہ کیا جارہا ہے۔ ان مظاہروں میں مردوں کے شانہ بشانہ خواتین اور بچوں کی بھی ایک کثیر تعداد ہوتی ہے۔

پاکستان قونصلیٹ گلاسگو کےسامنے، ایڈنبرا اور فالکرک کےاجتماعات میں بہت بڑی تعداد میں لوگ شریک ہوئےاور پی ٹی آئی کی حکومت کےخاتمے کو بیرونی سازش قرار دیا۔ تحریک انصاف اسکاٹ لینڈ کے صدور میاں علی احمد صوفی، چوہدری خالدجاوید، انس رانا، عاصم خان، کامران بٹ، ریاض قریشی، طارق شبیر، علی حیدر، راناحامد، افضل خان، رانا سمیع، عمراسحاق، عدیم احمد، حافظ رمضان، ظفراللہ، ذیشان بخاری، خالد جٹ، آصف رانا، چوہدری نثارعلی، رانا محمدخان، ارشدفاروقی، شبیر رانا، امجدرضا اور دیگر بے شمار مقررین نےاپنے خطابات میں کہا کہ ایک ایسے وقت میں جب پاکستان ترقی کی شاہراہ پر گامزن ہ و گیاتھا، بیرونی طاقتوں نے ایک منظم پروگرام کے تحت پاکستان میں انتشار پیدا کرنے کے لئے عمران خان کی حکومت کا تختہ الٹ دیا۔

مقررین کا کہنا تھا کہ عمران خان کو صرف اور صرف اسلئے اقتدار سے باہر کیا گیا کہ کیونکہ وہ ان کی ڈکٹیشن لینےکو تیار نہ تھا، وہ ایک آزاد خارجہ پالیسی کاعلمبردار تھا جس میں تمام بڑی طاقتوں کے ساتھ مساوی اور دو طرفہ تعلقات بنانا شامل تھا، وہ ڈومور کی گردان سن سن کر تنگ آگیا تھا، عمران خان کا موقف تھاکہ ہم نے آپ کی جنگ لڑی اپنے ہزاروں افراد شہیدکرائے، 150بلین ڈالر کانقصان کرایا،ملکی معیشت تباہ ہوئی، امن وامان کی صورتحال خراب ہوئی، اس کےباوجودآپ ہماری قربانیوں کی قدر نہیں کرتے بلکہ الٹا اپنی شکست پرہمیں مورودالزام ٹھہراتےہیں، انکی یہ صاف گوئی اور دلیری بڑی طاقتوں کو پسند نہ تھی، ایک بڑےملک کے سینئر سیاستدان نےدھمکیاں دیں اورآخرکار عمران خان کو اس جرأت مندی کی سزا دی گئی۔

فالکرک اورایڈنبرا میں بھی دوبڑے مظاہرے کئےگئے ان تمام مظاہروں میں عوام کا جوش وخروش دیدنی تھا، لوگ پی ٹی آئی کے بینر اور جھنڈے لہراتے ہوئے پُرجوش نعرےلگا رہےتھے، ان جلسوں میں خواتین کی بھی بڑی تعداد شامل تھی،جلسوں سے زاہدہ حسین، عظمیٰ تبسم، ارسلا سلطان، علینہ رانا، ثمینہ علی اور فوزیہ شہزاد نے بھی خطاب کیا۔ انکا کہنا تھا کہ جب تک یہ امپورٹڈ جعلی مینڈیٹ اور دھوکے سے بننے والی حکومت ختم نہیں ہو جاتی یہ احتجاج کا سلسلہ جاری رہے گا۔ ہم اپنے قائد عمران خان کے ساتھ ہیں ہم پاکستان کے جانبدارانہ عدالتی نظام اور فیصلوں کی مذمت کرتے ہیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes