افواج پاکستان و قومی اداروں کیساتھ اظہار یکجہتی کیلئے اوورسیز پاکستان ویلفیئر کونسل کی تقریب – Kashmir Link London

افواج پاکستان و قومی اداروں کیساتھ اظہار یکجہتی کیلئے اوورسیز پاکستان ویلفیئر کونسل کی تقریب

سلاؤ (کشمیر لنک نیوز) افواج پاکستان و دیگر اداروں کیساتھ اظہار یکجہتی کیلئے سلاؤمیں او پی ڈبلیو سی کیجانب سے استحکام پاکستان کے عنوان سے پر وقار تقریب کا انعقاد کیا گیا، تقریب کا آغاز تلاوت کلام پاک اور نعت رسول مقبول سے حافظ اویس رضا قادری نے کیا جبکہ پاکستان کا قومی ترانہ شرکا کے ہمراہ معروف گلوکار نفیس عرفان نے پیش کیا ۔ کونسلرز فورم برطانیہ سمیت تمام سیاسی ،سماجی و مذہبی حلقوں کے شرکا کیجانب سے تمام پاکستانی اداروں بالخصوص افواج پاکستان کی خدمات کو زبردست الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا گیا ، مرکزی صدر او پی ڈبلیو سی حاجی عابد حسین ، ایاز رفیق اور صدر کونسلرز فورم کونسلر قیصر چوہدری کی میزبانی میں منعقد ہوئی استحکام پاکستان تقریب کی صدارت بانی و چیئرمین او پی ڈبلیو سی نعیم نقشبندی نے کی جبکہ مہمان خصوصی ڈپٹی ہائی کمشنر ، ہائی کمیشن فار پاکستان لندن ڈاکٹر محمد فیصل تھے۔ برطانوی رکن ہاؤس آف لارڈز، لارڈ قربان حسین اور چیئرمین ڈبلیو کوپ WCOP سید قمر رضا ،میئر آف ہائی ویکمب عارف حسین ، چشم کے میئر چوہدری ماجد دتہ ، ڈپٹی میئر چشم ولفورڈ آگسٹس، ڈپٹی میئر لوٹن آصف مسعود ، چیئرمین سلاؤ کونسل چوہدری افتخار گیسٹ آف آنرز تھے۔ تقریب میں برطانیہ بھر سے سیاسی ، سماجی و مذہبی رہنماؤں، 40سے زائد منتخب کونسلرز و میئرز اور تقریباً 300خواتین و حضرات شریک ہوئے ، شرکاء نے عدلیہ ، افواج پاکستان سمیت تمام اداروں کو زبردست الفاظ میں خراج تحسین پیش کرتے ہوئے اظہار یکجہتی کیا۔

پاکستانی سفارتخانہ لندن میں تعینات ڈپٹی ہائی کمشنر ڈاکٹر محمد فیصل نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آپ کسی بھی صوبے ، قبیلے ، سیاسی ، مذہبی یا سماجی پارٹی سے تعلق رکھتے ہوں، پاکستان اور سبز ہلالی پرچم سب سے مقدم ہے اور ہر صورت میں افواج پاکستان، عدلیہ اور دیگر اداروں کے تقدس کی پامالی کی سازشوں کا قلع قمع کرنا ہر پاکستانی کی اولین ذمہ داری ہے۔ افواج پاکستان ملکی سلامتی کی ضامن ہیں ، بلا شبہ اوورسیز پاکستانیز ، پاکستان کا سرمایہ ہیں ، انکا کہنا تھا کہ برطانیہ میں پاکستانی سفارتخانہ اور قونصلیٹس کمیونٹی خدمات میں مصروف عمل ہیں، ڈپٹی ہائی کمشنر ڈاکٹر محمد فیصل اوورسیز پاکستانیز ویلفئیر کونسل OPWC اور کونسلرز فورم کے زیرِ اہتمام مرکزی صدر حاجی عابد حسین ، ایاز رفیق کی میزبانی اور بانی و چیئرمین (OPWC)او پی ڈبلیو سی نعیم نقشبندی کی زیر صدارت منعقدہ استحکام پاکستان کے عنوان سے افواج پاکستان ، عدلیہ سمیت پاکستانی اداروں کیساتھ اظہار یکجہتی کی تقریب سے بطور مہمان خصوصی خطاب کر رہے تھے۔

برطانوی ہاؤس آف لارڈز کے رکن لارڈ قربان حسین کا کہنا تھا کہ اوورسیز کمیونٹی کو تمام سیاسی ،علاقائی وابستگیوں کو بالائے طاق رکھتے ہوئے پاکستان کے استحکام کے کیلئے کاوشیں اور متحرک کردار ادا کرنا ہوگا۔ افواج پاکستان کو ملک کے اندرون و بیرون بے شمار چیلنجر کا سامنا ہے اور ہزار پروپیگنڈہ کے باوجود پاکستانی قوم اور اوورسیز کمیونٹی افواج پاکستان کےشانہ بشانہ کھڑی ہے۔ میزبان تقریب ایاز رفیق کا کہنا تھا تھا کہ افواج پاکستان نے دہشت گردی کی جنگ کے خاتمے کیلئے آپریشن ضرب عضب اور آپریشن ردالفساد میں لازوال قربانیوں سے ایک نئی تاریخ رقم کی۔ صدر کونسلر فورم ساؤتھ کونسلر قیصر چوہدری، صدر نارتھ ہارون نذیر ،صدر بزنس فورم نعیم طاہر ، یونائٹڈ پشتون فورم کے ریاض مہمند، کونسلر اسلم خان ، کونسلر نوید رانا ، کونسلر عنصر راجہ کا کہنا تھا کہ اوورسیز پاکستانیز شانے سے شانہ ملا کر اپنی مسلح افواج کیساتھ کھڑے ہیں اور ہمیں اپنی مسلح افواج پر فخر ہے ، ڈپٹی میئر چشم کونسلر ولفورڈ اور سابق ترجمان یورپ پارلیمنٹ اینڈری والکر کا کہنا تھا کہ برطانیہ میں پاکستانی کمیونٹی سیاست سمیت ہر شعبہ میں متحرک کردار ادا کر رہی ہے اور افوج پاکستان کا دنیا میں امن کے قیام کیلئے نیٹو فورسز کے ساتھ متحرک کردار لائق تحسین ہے۔

چیئرمین ورلڈ کانگریس آف اوورسیز پاکستانیز سید قمر رضا کا کہنا تھا کہ استحکام پاکستان اس بات کا تقاضا کرتا ہے کہ افواج پاکستان ، عدلیہ اور دیگر اداروں کے خلاف جب بھی عوام میں ناامیدی ، مایوسی یا نفرت انگیز بات پھیلائی جائے تو اس کو ہم رد کریں، صدر پی پی پی گریٹر لندن میاں محمد سلیم ، صدر او پی ڈبلیو سی یوتھ فورم منصور کیانی ، صدر پیپلز یوتھ یورپ آصف خان ، پی ٹی آئی کے صدر اسلم ڈوگر ، ڈاکٹر عبدالباسط ،ممتاز کاروباری شخصیت نوید خان ، مسلم لیگ ن کے رہنما راجہ جاوید نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ افواج پاکستان ، اپنے سے سات گنا بڑی طاقت ، مکارپڑوسی ملک بھارت کی ریشہ دوانیوں کا مقابلہ کر رہی ہیں۔

تقریب میں او پی ڈبلیو سی عہدیداران سینئر نائب صدر چوہدری آفتاب حسین ، ایاز رفیق ، مشیر صدر کشمیر چوہدری دلپذیر ، صدر ساؤتھ اسلم ڈوگر، صدر بزنس فورم نعیم طاہر ، صدر بزنس فورم ساؤتھ ملک امیر کابل، صدر گریٹر لندن چوہدری فدا حسین ، صدر نارتھ ہارون نذیر، صدر پروفیشنل فورم انجنئیر فرخ جمیل ،انجنئیر وقاص ، جوائنٹ سیکریٹری طارق چوہدری، صدر یوتھ فورم منصور کیانی ، صدر لندن امجد بوبی، نائب صدر پرویز چوہدری ، صدر پی پی پی میاں محمد سلیم، چیئرمین پی وائی او یورپ آصف خان، مسلم لیگ کے راجہ جاوید اختر ، راجہ عثمان ، صدر تحریک انصاف ساؤتھ اسلم ڈوگر ، ڈاکٹر عبدالباسط مانچسٹر ، محبوب حسین ، محسن خان ، ڈاکٹر افتخار ، پاکستان کمیونٹی سینٹر ریڈنگ کے میاں کمال ، راجہ اصغر ،ڈاکٹر خالد باجوہ ، میاں شاہجہان ، راجہ تاج، چوہدری اصغر ، ملک قاسم ، سردار محمود سدوزئی ، سردار آصف ، سردار لطیف سدوزئی، صدر ویمن فورم لندن کرن عائشہ خالد ، صدر ہیومن رائٹس فورم و صدر مسلم لیگ ق برطانیہ چوہدری احسن گھرال ، راجہ شاہپال ، ڈاکٹر نورین اعوان ، طلعت گل ، شان خان، منزہ خان ، کیپٹن شہناز چوہدری ، راشد حسین، چوہدری ساجد علی،صدر آکسفورڈ عمران رانا، شاہد کیانی ، غلام صدیق، راجہ نواز،خالد سیف اللہ، راجہ تبریز خان، صدر ریڈنگ شمریز تارڑ، راجہ جاوید ، چوہدری شاہپال، صدر بیڈ فورڈ راجہ عدنان فاروق، محبوب دین، بشیر راجہ کے علاوہ پاکستانی کشمیری کونسلرز فورم کے عہدیداران سمیت سابق میئر بیڈ فورڈ کونسلر محمد مسعود ، کونسلر شہباز چیمہ ، کونسلر نواز، سابق مئیر ملٹن کینز کونسلر انصر حسین ، کونسلر عمران، کونسلر نبیل ، کونسلر راجہ اسلم خان ،کونسلر خلیل ، کونسلر فیاض،کونسلر مشتاق، کونسلر امجد ، کونسلر طاہر ملک ، کونسلر آصف ، کونسلر پرویز ، کونسلر گل مواذ ، ہائی ویکمب سے کونسلر مزمل حسین ، نائب صدر کونسلرز فورم راجہ ضیاء، کونسلر ایوب چوہدری ، کونسلر صفدر ، کونسلر کیانی ، کونسلر ماجد ، کونسلر ریاض، کونسلر الیاس، کونسلر بھٹی ، کونسلر صفدر ، سابق کونسلر راجہ ظفر اقبال ، کونسلر عارف ، کونسلر عمران حسین، سلاؤ سے کونسلرشریف احمد ، کونسلر شفیق ، کونسلر فیاض راجہ ، کونسلر نوید رانا ، سابق مئیر راجہ زراعت ،کونسلر کاشان واجد ، سابق مئیر میڈن ہیڈ فنانس سیکرٹیری کونسلرز فورم اصغر مجید ، وٹفورڈ سے کونسلر آصف خان، ایلزبری سی کونسلر طفیل حسین ، کونسلر وحید راجہ سمیت سیاسی ، سماجی اور مذہبی رہنماؤں نے شرکت کی ۔

50% LikesVS
50% Dislikes