لوٹن کونسل چیمبر میں جامعہ اسلامیہ غوثیہ لوٹن ٹرسٹ کے زیراہتمام استحکام پاکستان کانفرنس – Kashmir Link London

لوٹن کونسل چیمبر میں جامعہ اسلامیہ غوثیہ لوٹن ٹرسٹ کے زیراہتمام استحکام پاکستان کانفرنس

لوٹن (کشمیر لنک نیوز) لوٹن بارو کونسل چیمبر میں جامعہ اسلامیہ غوثیہ لوٹن ٹرسٹ کے زیر اہتمام اور علامہ قاضی عبدالعزیز چشتی کی صدارت اور نظامت میں استحکام پاکستان کی تقریب کا اہتمام کیا گیا، مہمان خصوصی قائم مقام ہائی کمشنر حسن علی ضیغم نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تحریک پاکستان کا ماٹو بانی قائداعظم محمد علی جناح کے 3 فرمودات اتحاد، تنظیم اور یقین محکم تھا اوراستحکام پاکستان بھی “اتحاد” کے بغیر نہیں حاصل ہو سکتا، انہوں نے کہا کہ کشمیر سے پاکستان کی محبت غیر مشروط ہے، انہوں نے ہائی کمشنر کی طرف سے تقریب کیلئے خیرمقدمی پیغام دیا اور زور دیا کہ ہمیں اپنے ملک کے مفاد کو ہر شے پر ترجیح دینا ہوگی، اوورسیز میں بسنے والوں کو انہوں نے آپس میں اتفاق اور اتحاد قائم کرنے پر زور دیا۔

لبرل ڈیموکریٹس سے متعلق لارڈ قربان حسین ( ستارہ قائداعظم) نے خطاب میں پاکستان کی شاندار کامیابیوں کا احاطہ کرتے ہوئے کہا کہ باوجود کئی طرح کے چیلنجوں کے پاکستان نے ترقی کی منازل تیزی سے طے کی ہیں۔ پاکستان کے پاس دنیا کی بہترین فوج ہے جس نے تن تنہا دہشت گردی کے عفریت سے ملک کو نجات دلائی، انہوں نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ برطانیہ نے حل طلب چھوڑا، اب برطانیہ کو ہی چاہیے کہ وہ پاکستان اور بھارت کو مذاکرات کی میز پر لا کر مسئلہ کشمیر کا کشمیری عوام کی مرضی کے مطابق حل تلاش کرنے میں مدد دے، انہوں نے برطانوی پاکستانیوں سے اپیل کی کہ وہ پاکستان کی انتشار کی سیاست کو برطانوی گلیوں میں نہ لائیں بلکہ یہاں پاکستان کا ایک سافٹ امیج ڈویلپ کریں، یعنی وطن کا مثبت چہرہ پیش کریں۔

بیڈ فورڈ سے لیبر ممبر پارلیمنٹ راجہ محمد یاسین نے کہا کہ اپنی کمزوریوں کو شناخت کرنے اور جائزہ لینے سے ہی ان اصلاح کی جا سکتی ہے، مسئلہ کشمیر پر انہوں نے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ برطانوی حکومت کے ساتھ جب بھی مسئلہ کشمیر اٹھایا جائے وہ اس ایشو کو پاکستان اور بھارت کے درمیان تنازع قرار دے کر اپنی جان چھڑانے کی کوشش کرتے ہیں مگر ہم یقین دلاتے ہیں کہ ہم مسئلہ کشمیر کو بار بار پارلیمنٹ میں اٹھاتے رہیں گے۔ ڈپٹی لیڈر لوٹن کونسل راجہ محمد اسلم خان نے خیرمقدمی کلمات میں کہا کہ کوئی بھی لیڈر جو پاکستان کو خوشحالی کی طرف لے جائے ہم اس کی سپورٹ کریں گے، انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں معاشرے میں خود اپنے رویوں پر بھی غور کرنا چاہیے۔

مرکزی جماعت اہلسنت یوکے اینڈ اوورسیز ٹرسٹ کے مرکزی جنرل سیکرٹری علامہ قاضی عبدالعزیز چشتی نےاپنے صدارتی خطاب میں کہا کہ وطن کی مسلح افواج جرات ، بہادری اور دلیری کی علامت ہیں۔ان کی قربانیاں تاریخ کا ایک روشن باب ہیں، انہوں نے کہا کہ آئیے آج تجدید عہد کریں کہ ہم افواج پاکستان کے شانہ بشانہ کھڑے رہیں گے کیونکہ پاکستان اس وقت ایک نازک اور مشکل وقت سے گزر رہا ہے، دشمن قوتیں پاکستان میں خانہ جنگی پیدا کرنا چاہتی ہیں۔ انہوں نے کشمیریوں کی تحریک آزادی سے گہری کمٹمنٹ کا اظہار بھی کیا ۔ انہوں نے قائم مقام ہائی کمشنر حسن علی زیگم، فرسٹ سیکرٹری کمیونٹی ویلفئیر فیصل محمود، کوآرڈینیشن قونصلر محمد اسد رشید اور ہائی کمیشن کے عملے کی لوٹن آمد پر خوش آمدید کہا اور کمیونٹی کو بہترین سروسز مہیا کرنے پر خراج تحسین پیش کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کا ہر باشندہ تحریک آزادی کشمیر کی حمایت کرتا ہے ۔

کشمیر سالیڈیریٹی کمپئین لوٹن کے کوآرڈینیٹر حاجی چوہدری محمد قربان نے کہا کہ سب سے پہلے استحکام پاکستان پروگرام کے انعقاد پر قاضی عبدالعزیز چشتی کی اس کاوش کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ کشمیری وہ عظیم قوم ہیں جن کا کوئی بھی فرد جب شہید ہوتا ہے تو وہ وصیت کر جاتا ہے کہ مجھے پاکستان کے پرچم میں دفن کیا جائے، ہمارے اکابرین سردار محمد ابراہیم خان، چوہدری نور حسین، سردار فتح محمد خان کریلوی اور دیگر نے قیام پاکستان سے ہی قبل کشمیر کے پاکستان کے ساتھ الحاق کا فیصلہ کر دیا تھا، تاہم استحکام پاکستان کشمیر کی آزادی اور الحاق پاکستان سے مضبوط ہو سکتا ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ سرحدوں کی دیکھ بھال اور دشمن کے خلاف افواج پاکستان کے کردار کو مضبوط بنانے کے لیے پاکستان میں سیاسی استحکام اشد ضروری ہے جو صرف پارلیمنٹ کی بالادستی سے ممکن ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes