پاکستانی سفارتخانہ آسٹریا میں یوم یکجہتی کشمیر کی تقریب اور پاک فرینڈز کی احتجاجی ریلی – Kashmir Link London

پاکستانی سفارتخانہ آسٹریا میں یوم یکجہتی کشمیر کی تقریب اور پاک فرینڈز کی احتجاجی ریلی

ویانا (کشمیر لنک نیوز) آسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں پاکستان سفارتخانے کے زیر اہتمام یوم یکجہتی کشمیر یوم سیاہ کے طور پر منایا گیا ، تاکہ غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں وکشمیر کے عوام سے اظہار یکجہتی کیا جاسکے ۔ تقریب کا آغاز طاہر جنجوجہ کی تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا۔
تقریب سے ایمبیسی کے افسر فسر راٹھور۔ ڈی ایچ ایم عامر سعید پاک فرینڈز آسٹریا کے صدر علامہ غلام مصطفی بلوچ۔ خواجہ منظور۔ مظاہر جعفری۔ نے کشمیری عوام پر ہونے والے ظلم بربریت پر اظہار خیال کیا۔ نظامت کے فرائض فرسٹ سیکرٹری لیاقت واڑئچ نے انجام دیئے ۔ تارکین وطن کے نمائندوں کے علاوہ آسٹریا کے شہریوں نے بھی اس تقریب میں شرکت کی۔
اس موقع پر ایک مختصر دستاویزی فلم دکھائی گئی جس میں مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کے خلاف ہونے والی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو اجاگر کیا جو 5 اگست 2019 کو بھارت کی غیرقانونی یکطرفہ کارروائیوں کے بعد سے شدت اختیار کرگئی ہیں۔


بھارتی مظالم کی مذمت کرتے ہوئے مقررین نے کشمیری عوام کو خراج تحسین پیش کیا جو بہادری سے جدوجہد کر رہے ہیں اور آزادی حاصل کرنے کے لئے بڑی قربانیاں پیش کررہے ہیں۔ انہوں نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر کے عوام کی حمایت میں اپنی آواز بلند کریں جنکے اقوام متحدہ سے تسلیم شدہ حق سے انکار کیا گیا ہے اور وہ ہندوستان کی طرف سے کئی دہائیوں سے جاری وحشیانہ قبضے کی مذمت کریں جو دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کا دعویدار ہے۔
اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سفیر پاکستان آفتاب احمد کھوکھر نے کہا کہ ہندوستان کی ہندو انتہا پسند حکومت پالیسیوں کے ذریعہ فاشسٹ ایجنڈے پر عمل پیرا ہے جس کا مقصد مقبوضہ کشمیر کو مسلم اکثریتی ریاست سے ہندو اکثریت والی ریاست میں تبدیل کرنا ہے۔ اس کی الگ شناخت کو ختم کرنا ہے۔ انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ پاکستان مقبوضہ کشمیر کے عوام کو تمام سفارتی ، سیاسی اور اخلاقی مدد فراہم کرتا رہے گا۔ انہوں نے ہندوستان کی متصادم پالیسیوں کا بھی حوالہ دیا جس سے جنوبی ایشیاء میں امن و استحکام کو شدید خطرہ لاحق ہے۔
تقریب کے آخر میں کمیونٹی کے نمائندوں نے ایک قرار داد منظور کی جس میں بھارتی اقدامات کی شدید مذمت کی گئی اور مطالبہ کیا گیا کہ مقبوضہ کشمیر کے عوام کے خلاف انسانی حقوق کی تمام خلاف ورزیوں کو ختم کیا جائے ، 5 اگست 2019 کو اپنائے گئے یکطرفہ اقدامات کو ختم کیا جائے ، اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرادادوں تعمیل کی جائے۔

اسی روز ویانا میں کشمیری بہن بھائیوں پر 73 سال سے بھارت کی جانب سے ظلم بربریت کے خلاف ایک احتجاجی مظاہرے کا بھی اہتمام کیا گیا پاک فرنیڈز آسٹریا کے زیر اہتمام ریلی سٹاڈ پارک سے ہوتی ہوئی بھارتی سفارت خانہ کے سامنے پہنچی جہاں احتجاج کرتے ہوئے بھارتی افواج اور مودی کے خلاف نعرہ بازی کی گئی۔ ریلی میں کشمیر افیرز کمیٹی کے صدر پروفیسر شوکت اعوان ۔ پاک فرنیڈز آسٹریا کے صدر مذہبی سکالر علامہ غلام مصطفی بلوچ۔ چیرمین پاک فرنیڈز چوہدری قمر ۔ پاک اورسیز کمیونٹی کے صدر رانا ادریس۔ سنیئر نائب صدر ریاض بلوچ۔ سرپرست اعلی منہاج القرآن آسٹریا الحاج خواجہ نسیم ۔ خواجہ منظور احمد۔ مظہر جعفری ۔ امام سجاد اسلامک سنٹر کے صدر غالب حسین سید نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 73 سال سے بھارت افواج کشمیری عوام پر ظلم بربریت جاری رکھے ہوئے ہے اس ظلم کو بند کیا جائے ۔

50% LikesVS
50% Dislikes