سابق وزیر اعظم سمیت متعدد سیاستدانوں کو دھمکی آمیز ای میلز بھیجنے والے نوجوان کو دو سال قید کی سزا – Kashmir Link London

سابق وزیر اعظم سمیت متعدد سیاستدانوں کو دھمکی آمیز ای میلز بھیجنے والے نوجوان کو دو سال قید کی سزا

سلائو (کشمیر لنک نیوز) سابق وزیراعظم سمیت متعدد برطانوی سیاستدانوں کو دھمکی آمیز ای میل بھیجنے والے نوجوان کو دو سال قید کی سزا کا حکم۔
سلائو برکشائیر کے رہائشی واجد شاہ نے اس وقت کی وزیر اعظم تھریسا مے کو دھمکی آمیز ای میل کی تھی جبکہ اس نے ایسے ہی پیغامات سابق وزیر داخلہ لارڈ بلنکٹ، بیرونس لسٹر، کیرولین نوکس اور سابق ایم پی مارک لنکاسٹر سمیت اپنے مقامی سکھ ایم پی تن من جیت سنگھ کو بھی بھیجے تھے۔


سدک کرائون کورٹ میں ملزم نے جان سے مار دینے کی دھمکی اور زیادتی پر منبی پیغامات کی ترسیل سے صاف انکار کیا تھا۔ جبکہ دوران ٹرائل پراسیکیوٹر بیری میک ایلڈف نے وہ شدت آمیز پیغامات بھی پڑھ کر سنائے۔
سابق وزیر اعظم تھریسا مے نے پراسیکیوٹر کے ذریعے عدالت کو بتایا کہ انتہائی جارحانہ، دھمکی آمیز اور پریشان کن پیغام نے انہیں حقیقی پریشانی اور تشویش میں مبتلا کردیا تھا۔ انہوں نے وضاحت کی کہ انہیں پہلے بھی زیادتی پر مبنی پیغامات موصول ہوچکے تھے مگر اس قطعی مختلف پیغام میں مجھے ہلاک کرنے کی متعدد واضح دھمکیاں تھیں۔


دوران سماعت عدالت کو بتایا گیا کہ ملزم نے سیاستدانوں کو ایسے ای میل بھیجے، جس میں نسلی بہتان اور انہیں بندوق یا چھری سے مارنے کی دھمکیاں تھیں۔ اپنے مقامی ایم پی تن من سنگھ دھیسی اور سابق وزیر مسلح افواج لارڈلنکاسٹر کو شاہ نے کہا کہ وہ ان کے سر تن سے جدا کردے گا۔


احتیاطی تدبیر کے طور پر پولیس کی جانب سے مسٹر دھیسی کو اپنے حلقہ کا دفتر چھوڑنے کا مشورہ دیا گیا۔
ملزم اینے جرم سے انکاری رہا ان سے مارچ اور اپریل میں ایسے ای میل بھیجنے سے لاتعلقی کا اظہار کیا تاہم سدک کرائون کورٹ نے ٹرائل کے بعد اسے دو سال قید کی سزا سنا کر جیل بھیج دیا۔

50% LikesVS
50% Dislikes