پاکستان کو کورونا ریڈ لسٹ میں ڈالنے پر برطانوی پارلیمنٹ کے درجنوں ارکان کا بورس جانسن کو خط – Kashmir Link London

پاکستان کو کورونا ریڈ لسٹ میں ڈالنے پر برطانوی پارلیمنٹ کے درجنوں ارکان کا بورس جانسن کو خط

لندن (اکرم عابد) پاکستان کو ریڈ لسٹ میں شامل کرنے کے معاملے پر برطانوی پارلیمنٹ کے 40 سے زائد ارکان اب تک وزیراعظم بورس جانسن کو خطوط لکھ کر اپنے تحفظات کا اظہار کرچکے ہیں جن میں پاکستانی نژاد اور دیگر مقامی اراکین پارلیمنٹ نے حکومت کی جانب سے پاکستان کو کورونا ریڈ لسٹ میں ڈالنے پر احتجاج کیا ہے۔

خطوط کے مطابق اس اقدام سے پاکستان اور بنگلا دیش جنھیں ریڈ لسٹ میں ڈالا گیا ہے، برطانوی شہری متاثر ہورہے ہیں۔

خطوط کے مطابق برطانیہ میں11 لاکھ سے زیادہ پاکستانی مقیم ہیں۔ پاکستان کو ریڈ لسٹ میں ڈالے جانے کا واضح جواز نہیں دیا گیا۔ ریڈ لسٹ میں ڈالے جانے کے طریقہ کار پر بھی تحفظات ہیں۔

اراکین پارلیمنٹ نے خط میں کہا کہ پاکستان میں کورونا انفیکشن ریٹ برطانیہ سے بھی کم ہے۔ پاکستان میں کورونا کیسز ایسے ممالک سے بہت کم ہیں جو ریڈ لسٹ پر نہیں ہیں۔ خط میں سوال کیا گیا ہے کہ کن شواہد کی بنیاد پر پاکستان اور بنگلا دیش کو ریڈ لسٹ میں ڈالا گیا۔

ارکان پارلیمنٹ نے کہا کہ ریڈ لسٹ میں ڈالنے اور نکالنے کا طریقہ کار بھی بتایا جائے اور یہ بھی بتایا جائے کہ ریڈ لسٹ کا دوبارہ جائزہ کب لیا جائے گا۔

50% LikesVS
50% Dislikes