دنیا میں پہلی پوزیشن اور نابینہ طالبہ کیلئے آکسفورڈ سکالرشپ، پاکستانی سپوتوں نے ملک کا نام روشن کردیا – Kashmir Link London

دنیا میں پہلی پوزیشن اور نابینہ طالبہ کیلئے آکسفورڈ سکالرشپ، پاکستانی سپوتوں نے ملک کا نام روشن کردیا

لندن (عمران راجہ) صوبہ پنجاب کے شہر رحیم یار خان سے تعلق رکھنے والے پاکستانی ڈاکٹر عظمان طارق نے سرجری کے عالمی امتحان میں پہلی پوزیشن حاصل کر کے ملک کا نام عالمی سطح پر روشن کردیا۔

ڈاکٹر عظمان طارق نے انگلینڈ کے رائل کالج آف سرجنز کے ’ایم آر سی ایس‘ کے امتحان میں 93 فیصد نمبر حاصل کرتے ہوئے پوری دنیا میں پہلی پوزیشن حاصل کر لی ہے۔ ڈاکٹر عظمان طارق یہ اعزاز حاصل کرنے والے پہلے پاکستانی ہیں۔

رائل کالج آف سرجنز انگلینڈ اینڈ ائرلینڈ کے 4 میڈیکل کالجز ہیں جس کے تحت ’ایم آر سی ایس‘ کا امتحان لیا جاتا ہے اور دنیا بھر سے ڈاکٹر اور سرجنز اس میں حصے لے سکتے ہیں، انگلینڈ میں سرجری کی پریکٹس کے لیے اس امتحان میں کامیابی حاصل کرنا لازمی ہے۔

ممبر شپ آف دی رائل کالج آف سرجن ’ایم آر سی ایس‘ کے امتحان میں خلیجی ممالک، یورپی ممالک، بنگلہ دیش اور بھارت سے 8 ہزار سے زائد سرجنز حصہ لیتے ہیں۔ ڈاکٹر محمد عظمان طارق کا عالمی سطح پر پہلی پوزیشن حاصل کرنا ملک اور قوم کے لیے کسی اعزاز سے کم نہیں ہے۔

ادھر پاکستان سے تعلق رکھنے والی نابینا طالبہ خانسہ ماریہ کو آکسفورڈ یونیورسٹی کی اسکالرشپ کیلئے منتخب کرلیا گیا ہے۔ خانسہ ماریہ کا آکسفورڈ یونیورسٹی میں 2021 کے موسمِ خزاں کے داخلوں میں پاکستان سے ’رہوڈ‘ اسکالرشپ کیلئے انتخاب کیا گیا ہے۔

خانسہ ماریہ ’رہوڈ‘ اسکالرشپ کے تحت آکسفورڈ یونیورسٹی سے ثبوت پر مبنی پالیسی مداخلت اور سماجی تشخیص میں ماسٹرز کی تعلیم حاصل کریں گی۔ ٹوئٹر پر حکومتِ پاکستان کے آفیشل اکاؤنٹ سے خانسہ کو پاکستان کا نام عالمی سطح پر روشن کرنے کیلئے سراہا گیا ہے۔

بینائی سے محروم طالبہ کا کہنا ہے کہ اُن کی کوشش ہے کہ وہ اپنے جیسے لوگوں کیلئے کچھ کریں اور پاکستان میں ان کی مدد کیلئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں۔

50% LikesVS
50% Dislikes