پاکستان ہائی کمشنر لندن کا دولت مشترکہ کے وزراء خارجہ سے خطاب، افغان صورتحال پر بریفنگ – Kashmir Link London

پاکستان ہائی کمشنر لندن کا دولت مشترکہ کے وزراء خارجہ سے خطاب، افغان صورتحال پر بریفنگ

لندن (اکرم عابد) وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی نما ئندگی کرتے ہوئے ہائی کمشنر معظم احمد خان جو کہ دولت مشترکہ میں پاکستان کے نمائندے بھی ہیں ، نے آج منعقدہ دولت مشترکہ کے وزرائے خارجہ کے سالانہ اجلاس سے خطاب کیا۔

اپنے خطاب میں ہائی کمشنر نے افغانستان کی صورتحال اور پاکستان کی جانب سے انخلاء اور انسانی امداد کی کوششوں میں کردار ادا کرنے کے حوالے سے پاکستان کا نقطہ نظرپیش کیا۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ افغانستان میں کئی دہائیوں سے جاری عدم استحکام سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ملک کی حیثیت سے پاکستان کا اس ملک میں امن اور استحکام میں اہم حصہ ہے۔ پاکستان نے نہ صرف 40 لاکھ سے زائد افغان مہاجرین کی میزبانی جاری رکھی بلکہ اس ملک میں تنازعات کی وجہ سے 80 ہزار ہلاکتیں اور 150 ارب ڈالر کا معاشی نقصان بھی اٹھایا۔

ہائی کمشنر نے اس بات پر زور دیا کہ آج بالآخر اس ملک میں 40 سالہ جنگ کو ختم کرنے اور افغان عوام کو مفاہمت اور دوبارہ تعمیر کے قابل بنانے کا موقع ملا۔ اس وقت افغانستان ایک تباہی کے دہانے پر کھڑا ہے جس میں 18 ملین افغانوں کو مدد کی اشد ضرورت ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ یہ بھی ضروری ہے کہ افغان سرزمین کسی ملک کو نقصان پہنچانے کے لیے استعمال نہ ہو۔ انہوں نے بین الاقوامی برادری پر زور دیا کہ وہ افغانستان کو تنہا چھوڑنے کی غلطی نہ کریں، ایک قابل عمل نظریہ اپنائیں اور تعاون کو برقرار رکھیں۔ اس نازک موڑ پر افغان قوم کو امن ، ترقی اور خوشحالی کے راستے پر مضبوطی سے چلنے میں مدد ملنی چاہیے۔

ہائی کمشنر نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ جنوبی ایشیا میں ایک ریاست نے اقلیتوں کو منظم طریقے سے نشانہ بنایا ، تنازعات کے علاقوں میں غیر قانونی آبادیاتی تبدیلی کو انجینئر کیا اور انتخابی فوائد حاصل کرنے کے لیے علاقائی کشیدگی کو ہوا دی۔ انہوں نے دولت مشترکہ پر زور دیا کہ وہ جان بوجھ کر اشتعال انگیزی ، نفرت اور تشدد پر اکسانے جیسے عمل کو روکنے میں اپنا کردار ادا کرے۔

ہائی کمشنر معظم احمد خان نے کامن ویلتھ ایجنڈے کے مسائل بشمول موسمیاتی تبدیلی ، تجارت اور وبائی امراض سے نمٹنے کے حوالے سے پاکستان کے موقف سے بھی آگاہ کیا۔ دولت مشترکہ کے وزرائے خارجہ سالانہ اجلاس کرتے ہیں تاکہ تنظیمی ایجنڈے کا جائزہ لیا جائے اور دولت مشترکہ کے اعلیٰ ترین فورم ، دولت مشترکہ سربراہان حکومت کے اجلاس (CHOGM) کے فیصلوں پر عمل کیا جائے۔ روانڈا اگلے سال اگلے CHOGM سیشن کی میزبانی کرنے والا ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes