لندن میں چاقو زنی کی تازہ ترین واردات میں ہلاک ہونے والا نوجوان افغان طالبعلم نکلا – Kashmir Link London

لندن میں چاقو زنی کی تازہ ترین واردات میں ہلاک ہونے والا نوجوان افغان طالبعلم نکلا

لندن (کشمیر لنک نیوز) جنوب مغربی لندن میں ایک 18 سالہ نوجوان جسے کھیل کے دوران چھرا گھونپ کر ہلاک کردیا گیا تھا، نام ظاہر کردیا گیا۔ افغانستان سے حصول علم کیلئے برطانیہ آئے اس نوجوان کا نام حضرت ولی تھا۔

میٹروپولیٹن پولیس نے بتایا کہ یہ نوجوان منگل کی شام تقریباً 4:45 بجے کرینفورڈ وے، ٹویکن ہام کے مقام پر جان لیوا طور پر زخمی ہوا۔ اسے ہسپتال لے جایا گیا لیکن صرف ایک گھنٹے بعد مردہ قرار دے دیا گیا۔ اس کے خاندان کو بتا دیا گیا ہے۔ متعدد تماشائیوں نے اس واقعے کی عکس بندی کی تھی، پولیس نے ان سے اپیل کی ہے کہ وہ سوشل میڈیا پر فوٹیج ڈالیں۔

چیف انسپکٹر وکی ٹنسٹال نے کہا کہ یہ واقعہ کھیل کے میدان میں پیش آیا اور کئی لوگوں نے دیکھا۔ انہوں نے کہا کہ کوئی بھی ویڈیو سوشل میڈیا کے ذریعے شیئر نہیں کی جاتی تاکہ اس نوجوان کے خاندان کو مشکل وقت میں مزید تکلیف کا باعث نہ بن سکے۔ اس کے بجائے براہ کرم فوری طور پر پولیس سے رابطہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ ہم اس افسوسناک واقعے کے پس پردہ محرکات کو جاننے کے لئے کام کر رہے ہیں۔

واضع رہے یہ برطانوی دارالحکومت کا اس سال کا 25 واں قیسا قتل ہے۔ رچمنڈ کالج کے طالبعلم کے بارے میں انکے ایک رشتہ دار کا میڈیا کو بتانا تھا کہ ولی ایک سلجھا ہوا نوجوان تھا جو حصول علم کیلئے اکیلا برطانیہ آیا تھا اسکی باقی فیملی افغانستان ہی میں ہے۔

یہ امر قابل ذکر ہے کہ کورونا وائرس لاک ڈاؤن کی وجہ سے قتل عام کی مجموعی تعداد کم ہونے کے باوجود یہ سال نوعمروں کی پرتشدد اموات کا ریکارڈ ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes