سابق وزیر اعظم ٹونی بلیئر کو ملنے والے سر کے خطاب کے خلاف دس لاکھ سے زائد افراد نے احتجاج ریکارڈ کرادیا – Kashmir Link London

سابق وزیر اعظم ٹونی بلیئر کو ملنے والے سر کے خطاب کے خلاف دس لاکھ سے زائد افراد نے احتجاج ریکارڈ کرادیا

لندن (عمران راجہ) سابق وزیر اعظم برطانیہ کو ملنے والے سر کے خطاب کی واپسی کیلئے ایک ملین سے زائد برطانوی افراد نے ایک پٹیشن پر دستخط کرکے آواز بلند کردی ہے کہ عراق کے معصوم عوام کو اپنی خواہسات کی بھینٹ چڑھانے والے سابق وزیر اعظم ٹونی بلیئر سے سر کا خطاب واپس لیا جائے کیونکہ انکے اس فیصلے سے لاکھوں بے گناہوں کو اپنی زندگیوں سے ہاتھ دھونے پڑے۔

واضع رہے اعزاز کیخلاف درخواست سابق فوجی نے دائر کی تھی، جس میں دعوی کیا گیا تھا کہ ٹونی بلیئر نے برطانیہ کے آئین اور معاشرے کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ۔سابق فوجی کی دائر درخواست میں کہا گیا کہ بلیئر ناقابل شمار شہریوں اور اہلکاروں کی موت کے ذمہ دار ہیں، اعزاز کے حقدار نہیں۔ جبکہ میڈیا کے مطابق میڈیا کے مطابق ملکہ برطانیہ نے ٹونی بلیئر کو اعلی ترین اعزاز آرڈر آف دا گارٹر سے تحفتا نوازا تھا۔

برطانیہ کے سابق وزیراعظم ٹونی بلیئر کو دیا گیا سر کا خطاب واپس لینے کی تحریک میں جاری پٹیشن پر دس لاکھ پینسٹھ ہزار سے زائد دستخط آچکے اور لوگ ابھی اس پر دستخط کررہے ہیں۔ اس پٹیشن کے محرک کا کہنا ہے کہ سال نو کے موقع پر ٹونی بلیئر کو اس بڑے اعزاز سے نوازا جانا انسانیت اور آئین برطانیہ کی توہین ہے۔ اس آن لائن پٹیشن پر دستخط کرتے ہوئے متعدد افراد نے دلسچپ کمنٹس بھی دیئے ہیں، ایک فرگوس مرے نامی ایک شخص نے لکھا کہ جب تک یہ اعزاز ٹونی بلیئر کے پاس رہیگا اس اعزاز کی اصل اہمیت بے معنی ہوجائے گی۔

50% LikesVS
50% Dislikes