منہاج القرآن لندن میں بلقیس ایدھی کی یاد میں تعزیتی تقریب کا انعقاد اور افطار ڈنر – Kashmir Link London

منہاج القرآن لندن میں بلقیس ایدھی کی یاد میں تعزیتی تقریب کا انعقاد اور افطار ڈنر

لندن (کشمیر لنک نیوز)منہاج القرآن لندن میں بلقیس ایدھی کی یاد میں ایک تعزیتی تقریب کا انعقاد کیا گیا،تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایدھی سینٹر کراچی کے یتیم خانے سے دو بچوں کو گود لینے والے لندن میں مقیم آصف رانی والا نے کہا کہ ان بچوں کے ہماری زندگی میں آنے سے خوشی آ گئی ہے۔ دونوں بچے لندن میں تعلیم حاصل کررہے ہیں اور بہت خوش ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بلقیس آنٹی نے ہماری زندگی کو بدل کر رکھ دیا اور ہمیں والدین کی ذمہ داری ادا کرنے کا موقع دیا۔ پاکستان میں خصوصاً خواتین اور بچوں کے حوالے سے بلقیس ایدھی نے جو خدمات سرانجام دیں وہ ناقابل یقین ہیں اور توقع ہے کہ ایدھی صاحب کی میراث کو جاری رکھا جائے گا۔

انسانیت کی خدمت کے حوالے سے عبدالستار ایدھی کی اہلیہ بلقیس ایدھی کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا اور ان کی ذات کے بارے میں نئی نسل کو آگاہ کرنے کے لیے ان کا ذکر نصاب میں شامل کیا جانا ضروری ہے۔ برطانیہ میں ایدھی فائونڈیشن کی نگران اریج آقا نے کہا کہ بلقیس ایدھی کی کمی ہمیشہ محسوس کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ بلقیس ایدھی کی محنت، سادگی اور خدمات کے حوالے سے ایک چیپٹر نصاب میں شامل کیا جائے تاکہ ان کی خدمات بچوں کے لیے مشعل راہ کا کردار ادا کرسکیں۔ اریج آقا نے کہا کہ بلقیس ایدھی نے جھولے پروگرام کے ذریعے تقریباً40ہزار بچوں کو محفوظ گھرانوں میں پرورش کا موقع فراہم کردیا ہے۔ جھولے پر لکھا ہوتا تھا کہ جھولے میں ڈال دیں، قتل نہ کریں، ایک گناہ کرکے دوسرا گناہ کیوں مول لیتے ہو، جان تو اللّٰہ کی امانت ہے، علامہ صادق قریشی نے کہا کہ عبدالستار ایدھی اپنی خدمات کے سبب ہمیشہ لوگوں کے دلوں میں زندہ رہیں گے۔

انہوں نے کہا کہ بلقیس ایدھی کی خدمات کو بھی سلام پیش کیا جو کڑے وقت میں اپنے شوہر کے ساتھ شانہ بشانہ کام کرتی رہیں اور انسانیت کی خدمت کے لیے پیش پیش رہیں۔ وہ پاکستان کا وقار تھیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے قائد شیخ الاسلام علامہ طاہر القادری نے بھی اظہار تعزیت کیا ہے۔ پاکستان ہائی کمیشن کے قونصلر انیل ظفر نے کہا کہ بلقیس ایدھی کی خدمات کو ہمیشہ سنہرے حروف سے لکھا جائے گا۔ انہوں نے ایدھی صاحب کے ساتھ مل کر جس طرح کام کیا اور جس طرح پاکستان کی خدمت کی اس کا ہر شخص معترف ہے اور جسے کبھی بھلایا نہیں جاسکتا۔ پاکستان پیپلز پارٹی برطانیہ کے صدر محسن باری نے کہا کہ بلقیس ایدھی کی پاکستان کے لیے گرانقدر خدمات ہیں۔ انہوں نے مذہب کی تفریق کے بغیر ہر شخص کی خدمت کی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں زلزلہ آئے یا سیلاب، ایدھی فائونڈیشن ہر محاذ پر آگے نظر آتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پہلے ہی عبدالستار ایدھی کے انتقال کی صورت میں پہنچنے والا نقصان ابھی پورا نہیں ہوا تھا کہ قوم کی ماں بلقیس ایدھی بھی اس دنیا سے چلی گئیں۔

نجمہ قائم خانی نے کہا کہ بلقیس ایدھی نے ہزاروں گھروں کو آباد کیا۔ بچوں کو گود لیا، بچیوں کی شادی کیں۔ عثمان کشمیری نے کہا کہ ایدھی صاحب اور بلقیس ایدھی نے جس طرح انسانیت کی خدمت کی وہ ناقابل فراموش ہے۔ اکرم قائم خانی نے کہا کہ بلقیس ایدھی کی موت کی صورت میں ہونے والا نقصان کوئی پورا نہیں کرسکتا کیونکہ پاکستان میں ایسے بہت کم لوگ ہیں جو اس طریقے سے کام کررہے تھے۔ یہ ایدھی فائونڈیشن کے علاوہ پورے پاکستان کا نقصان بھی ہے اور ہم یہ چاہتے ہیں کہ ہماری نوجوان نسل خاص طور پر خواتین، بلقیس ایدھی کے نقش قدم پر چلیں تاکہ ایسی مزید خواتین سامنے آسکیں۔ قبل ازیں قرآن خوانی کی گئی، سہیل سلامت نے نعت رسول مقبولﷺ پیش کی۔ تمام شرکا نے فیصل ایدھی سے اظہار تعزیت بھی کیا۔

50% LikesVS
50% Dislikes