لطف الرحمٰن نے اکثریتی نشستیں حاصل کرکے کونسل میں اپنی حکومت قائم کرنے کی راہ ہموار کرلی – Kashmir Link London

لطف الرحمٰن نے اکثریتی نشستیں حاصل کرکے کونسل میں اپنی حکومت قائم کرنے کی راہ ہموار کرلی

لندن (کشمیر لنک نیوز) لگاتار بے قاعدگیوں کے الزامات کا سامنا کرکے ٹاور ہیملٹ کی مقامی سیاست میں بری طرح پسنے والی شخصیت لطف الرحمٰن نے بالآخر حالیہ انتخابات میں اپنی کونسل میں اکثریت حاصل کرلی۔ لیبر پارٹی سے پابندی اور متعدد فراغتوں کے بعد اپنی قائم کی جانے والی انسپائیر پارٹی کے پلیٹ فارم سے سابق مئیر لطف الرحمٰن نے اکثریتی نشستیں حاصل کرکے کونسل میں اپنی حکومت قائم کرنے کی راہ ہموار کرلی۔

ایسٹ لندن کونسل میں 5مئی کو ہونے والے انتخابات میں جاتے وقت ایسپائر کے پاس دو نشستیں تھیں لیکن اس نے 45 میں سے 24 نشستیں جیت لیں۔ لیبر نے کم از کم 18 نشستیں جیتی ہیں۔ جس کے پاس پہلے 40 نشستیں تھیں۔ کونسل کے دو وارڈز کا اعلان ہونا باقی ہے۔ یہ معجزہ لفط الرحمٰن کے آفس سے ہٹائے جانے کے سات سال بعد دوبارہ بارو کے میئر منتخب ہونے کے بعد ہوا ہے کہ انہوں نےلیبر سے لندن میں ٹاور ہیملٹس کا کنٹرول چھین لیا ہے۔

لوکل ڈیموکریسی رپورٹنگ سروس کا کہنا ہے کہ کونسل انتخابات میں نشست جیتنے والی دیگر پارٹی کنزرویٹیو ہے، جس نے ایک نشست جیتی ہے۔ لیبر نے 2015سے اس کونسل کا کنٹرول سنبھالا ہوا تھا جب مسٹر رحمٰن کو الیکٹورل مس کنڈکٹ کا مرتکب ٹھہرایا گیا تھا۔ انہیں بدعنوانی اور غیر قانونی پریکٹسز کی وجہ سے عہدے سے ہٹا دیا گیا تھا اور ان کے آفس کیلئے کھڑے ہونے پر پانچ سال کیلئے پابندی عائد کر دی گئی تھی۔

موجودہ انتخابات میں شاندار کارکردگی اور اپنے دوبارہ انتخاب کے بعد مسٹر لطف الرحمٰن نے بی بی سی کو بتایا کہ وہ بہت خوش ہیں کہ ووٹرز نے انہیں اپنی خدمت کرنے کیلئے ایک اور موقع فراہم کیا ہے اور میں اپنا پروگریسیو ایجنڈا ڈلیور کروں گا، جو میں نے 2010 میں شروع کیا تھا۔

50% LikesVS
50% Dislikes