دنیا کی بہترین یونیورسٹیوں سے فارغ التحصیل گریجویٹس کیلئے حکومت برطانیہ کی نئی اسکیم – Kashmir Link London

دنیا کی بہترین یونیورسٹیوں سے فارغ التحصیل گریجویٹس کیلئے حکومت برطانیہ کی نئی اسکیم

لندن (مبین چوہدری) دنیا کی بہترین یونیورسٹیوں سے فارغ التحصیل گریجویٹس کو برطانیہ میں آباد کرنے کیلئے حکومت برطانیہ نے ایک نئی اسکیم کا اجرا کیا ہے جسکے تحت دنیا کی ممتاز ترین یونیورسٹیوں سے گریجویشن کرنے والے طلبا برطانیہ میں ایک نئی ویزا اسکیم کے تحت اپلائی کرسکتے ہیں۔ یہ اسکیم برطانیہ سے باہر کی ممتاز یونیورسٹیوں سے گزشتہ 5 سال کے دوران گریجویشن مکمل کرنے والوں کے لیے ہوگی۔

برطانوی حکومت کے مطابق ہائی پوٹینشل انڈیویژول روٹ یعنی اعلیٰ درجے کی ذہانت رکھنے والے افراد کیلئے طے کردہ انفرادی روٹ سے بہترین اور اعلیٰ ذہن رکھنے والوں کو کیرئیر کے آغاز میں برطانیہ لانے میں مدد مل سکے گی۔ اس اسکیم کے لیے ایسی یونیورسٹیوں سے فارغ التحصیل افراد اہل ہوں گے جن کی تعلیم جس سال مکمل ہوئی ہو ، اس برس ان کی یونیورسٹی ٹائمز ہائر ایجوکیشن ورلڈ یونیورسٹی رینکنگز یا Quacquarelli سائمنڈز ورلڈ یونیورسٹی رینکنگ یا دی اکیڈمک آف ورلڈ یونیورسٹیز میں سے کسی 2 میں ٹاپ 50 کا حصہ بنی ہو۔ برطانوی حکومت کی جانب سے 2021 کے لیے اہل یونیورسٹیوں کی فہرست بھی شامل کی گئی جس میں پاکستان کی کوئی یونیورسٹی شامل نہیں۔

ان یونیورسٹیوں سے تعلق رکھنے والے افراد کی پیدائش جہاں کی بھی ہو وہ اسکیم کے لیے اہل ہوں گے جبکہ انہیں اپلائی کرنے کے لیے جاب آفر کی ضرورت بھی نہیں ہوگی۔اس کے بعد اگر وہ مخصوص ضروریات پر پورے اترے تو وہ ملازمت کے لیے طویل المعیاد ویزا پر بھی سوئچ کرسکیں گے۔ اس ویزا پروگرام کی لاگت 715 برطانوی پونڈز ہوگی جو کہ امیگریشن ہیلتھ سرچارج کے طور پر ادا کرنا ہوگی جس سے برطانیہ میں آنے والے افراد افراد نیشنل ہیلتھ سروسز کو استعمال کرنے کی سہولت ملتی ہے۔ پروگرام میں اہل قرار پانے والے افراد اپنے خاندانوں کو بھی برطانیہ لاسکیں گے مگر انہیں کم از کم 1270 پونڈز کے فنڈ کو برقرار رکھنے کی ضرورت ہوگی۔

50% LikesVS
50% Dislikes