لارڈ قربان حسین کی تحریک پر مسئلہ کشمیر ایک بار پھر برطانوی ہائوس آف لارڈز میں زیر بحث – Kashmir Link London

لارڈ قربان حسین کی تحریک پر مسئلہ کشمیر ایک بار پھر برطانوی ہائوس آف لارڈز میں زیر بحث

مانچسٹر (محمد فیاض بشیر) برطانوی ہائوس آف لارڈ کے ممبر و کشمیر پارلیمنٹری گروپ کے سیکرٹری لارڈ قربان حسین کی کوششوں سے برطانوی ہائوس آف لارڈ میں مقبوضہ کشمیر کی صورتحال ، بھارتی مظالم ، انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو ایک بار پھر زیر بحث لایا گیا ہے۔ برطانیہ کے ایوان بالا میں کشمیر کی صورتحال پر ممبران کی جانب سے بات چیت ایک مثبت اور بہترین پیش رفت ہے اس سے سفارتی سطح پر مسئلہ کشمیر کے حوالے دور رس نتائج بر آمد ہوں گے۔

برطانوی پارلیمنٹ میں کشمیر دوست ممبران پارلیمنٹ کی کوششوں سے مسئلہ کشمیر کے حوالے سے تسلسل کے ساتھ سوالات اٹھائے جا رہے ہیں۔لارڈ قربان حسین نے ہائوس آف لارڈ میں کشمیر کی صورتحال ، انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر تحریک پیش کی تھی جس پر ہائوس آف لارڈ میں تحریک پر ممبران اپنے اپنے خیالات میں کشمیر کی صورتحال ، انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور یکطرفہ اقدامات پر گہری تشوش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر میں انسانی حقوق کی مکمل بحالی اور کشمیریوں کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق فیصلے کرنے کا مکمل اختیار ملنا چاہئے۔


اس موقع پر برطانوی ہائوس آف لارڈ کے ممبر و کشمیر پارلیمنٹری گروپ کے سیکرٹری لارڈ قربان حسین نے کہا کہ ہندوستان اپنے غیر جمہوری ، غیر آئینی اور غیر انسانی اقدامات کی وجہ سے دنیا بھر میں بے نقاب ہو چکا ہے۔ دنیا کی بڑی جمہوریت کا دعویدار جس طرح مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کر رہا ہے اس سے بھارت کے جمہوری دعووں کی قلعی کھل گئی ہے۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم نے نا صرف پارلیمنٹ سے باہر برطانیہ سمیت دنیا بھر میں کشمیریوں کے ساتھ ہونے والے مظالم پر آواز بلند کی بلکہ پارلیمنٹ میں بھی ہر موقع پر کشمیریوں کا مقدمہ پیش کیا ۔ ہماری تحریک پر برطانوی ہائوس آف لارڈ میں جس طرح ممبران نے کشمیر کے حوالے سے اپنے احساسات اور جذبات کا اظہار کیا ہے یہ کشمیریوں کے لئے حوصلہ افزاء اور بین الاقوامی سطح پر مسئلہ کشمیر کے لئے نیک شگون ہے ۔ انشاء اللہ ہم اپنے کشمیری بھائیوں کا مقدمہ ہر سطح پر اور ہر فورم پر لڑتے رہیں گے۔


دریں اثناء جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل نے ہائوس آف لارڈ کے ممبر لارڈ قربان حسین کی کوششوں کو سراہتے ہوئے انہیں خراج تحسین پیش کیا۔ تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے کہا ہے کہ برطانوی پارلیمنٹ میں کشمیر دوست ممبران پارلیمنٹ کی مسلسل کاوشوں سے مظلوم کشمیریوں کی بین الاقوامی سطح پر آواز بلندہو رہی ہے۔ برطانوی پارلیمنٹ میں کشمیر پارلیمنٹری گروپ کی پارلیمنٹ اور ہائوس آف لارڈ میں کوششیں قابل تحسین ہیں۔
برطانیہ میں 12لاکھ سے زائد اوورسیزکشمیری اپنے وطن کی آزادی کیلئے ہر سطح پر کام کر رہے ہیں اور ہندوستان کے جنگی جرائم اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر آئے روز سرگرمیوں میں مصروف رہتے ہیں۔ پارلیمنٹ میں کشمیر دوست ممبران کی کوششیں بھی کشمیریوں کے کیس کو دنیا میں مضبوط کر رہی ہیں۔ لارڈ قربان حسین کی کوششوں سے ہائوس آف لارڈ میں بحث سفارتی سطح پر ایک بہترین کوشش ہے جس پر تمام کشمیریوں کی ان کی کوششوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔

واضع رہے لارڈ قربان حسین کو برطانوی پارلیمنٹ سمیت ہر اہم فورم پر مسئلہ کشمیر اجاگر کرنے پر حکومت پاکستان کی طرف سے حال ہی میں ستارہ قائداعظم کے اعزاز سے بھی نوازا جاچکا ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes