وزڈن ڈریم ٹیم 2020: پاکستان کے دو کھلاڑی جگہ بنانے میں کامیاب، انڈیا کا کوئی کھلاڑی منتخب نہ ہوسکا – Kashmir Link London

وزڈن ڈریم ٹیم 2020: پاکستان کے دو کھلاڑی جگہ بنانے میں کامیاب، انڈیا کا کوئی کھلاڑی منتخب نہ ہوسکا

لندن (مسرت اقبال) پاکستانی کرکٹ شائقین کیلئے ایک اچھی خبر، نیوزی لینڈ میں مشکلات کا شکار ٹیم کے دو نوجوان کھلاڑیوں کو کرکٹ اعداد و شمار کے معروف ادارے وزڈن نے اپنی ڈریم ٹیم میں شامل کرلیا ہے۔
سال کے اختتام پر اس سال کی ڈریم ٹیم میں پاکستانی بیٹسمین بابر اعظم اور شان مسعود کو یہ اعزاز حاصل ہوا ہے۔


وژڈن نے سال 2020کی جتنی بھی کرکٹ ہوئی اس حوالہ سے بہترین ٹیسٹ ٹیم منتخب کی ہے اور اس کے لئے 11دسمبر 2019 سے 11دسمبر 2020کی تاریخ رکھی ہے۔
پاکستان کے ایک کھلاڑی کو اوپنر لیا گیا ہے اور دوسرے کھلاڑی کو مڈل آرڈر ٹیم میں شامل کیا گیا ہے جبکہ بائولنگ سائیڈ پر کوئی بھی پاکستانی کھلاڑی اپنی کارکردگی کی بنیاد پر اس ٹیم میں جگہ بنانے میں کامیاب نہیں ہوسکا۔


پاکستان ٹیم کے کپتان بابر اعظم بھی اس ٹیم میں نمایاں طور پر شامل ہیں جنہوں نے اس عرصہ میں 6 ٹیسٹ میچز میں 100کی بھاری بھرکم اوسط سے600رنز بنائے،143 ہائی اسکور رہا جبکہ انہوں نے بھی 3 سنچریز بنائیں۔
دوسرے کھلاڑی شان مسعود وژڈن ٹیسٹ الیون 2020میں اوپنر کے طور پر لئے گئے ہیں، انہوں نے3 مسلسل ٹیسٹ سنچریز بھی بنائی تھیں،6ٹیسٹ میچز میں46سے زائد کی اوسط سے انہوں نے 456رنزبنائے،156ہائی اسکور رہا جبکہ 3 سنچریز بھی بنائیں۔


انگلینڈ کے ڈوم سبلی10 میچز میں 648رنزکے ساتھ دوسرے اوپنر ہیں،ان کا بیٹنگ اوسط 43رہا۔
نیوزی لینڈ کے کین ولیمسن 5میچز میں 50 کی اوسط سے405رنزکے ساتھ ون ڈائون پوزیشن پر لئے گئے ہیں۔آسٹریلیا کے مارنس لبوشین نے3میچز میں 549اسکور کئے ایوریج ساڑھے 91رہی۔انگلینڈ کے بین سٹوکس8میچزمیں 53کی اوسط سے690 رنز اور پھر 21 وکٹ کی وجہ سے آل رائونڈر کے طور پر منتخب ہوئے ہیں۔

بائولنگ میں نیوزی لینڈ کے کیل جیمسن جگہ بنانے میں کامیاب رہے جنہوں نے4میچزمیں 20وکٹیں لی ہیں،9میچز میں 43وکٹیں لینے والے سٹورٹ براڈ بھی سال کی بہترین ٹیسٹ ٹیم کا حصہ ہیں۔ ایک اور کیوی بائولر ٹم سائوتھی بھی ان خوش قسمت میں شامل ہیں جنہیں وژڈن نے 2020کی بہترین ٹیسٹ ٹیم کا حصہ بنایا ہے، انہوں نے 6میچزمیں 38شکار کئے ہیں۔اسپنر کی جگہ آسٹریلیا کے نیتھن لائن نے لی ہے،انہوں نے 3میچز میں 20 کھلاڑی آئوٹ کئے۔
وکٹ کیپنگ کے لئے یہ اعزاز جنوبی افریقا کے کوئنٹن ڈی کاک کو ملا ہے جنہوں نے47 کی اوسط سے 4میچز میں 380 اسکو ر کئے۔ نیوزی لینڈ کے کین ولیمسن کو کپتان بنایا گیا ہے۔
واضع رہے اس ڈریم ٹیم میں بھارت کا کوئی کھلاڑی شامل نہیں ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes