حالیہ وفات پانے والے ممتاز علمائے کرام و مشائخ کی یاد میں تعزیتی ریفرنس، پیر عبدالقادر گیلانی کی خصوصی دعا – Kashmir Link London

حالیہ وفات پانے والے ممتاز علمائے کرام و مشائخ کی یاد میں تعزیتی ریفرنس، پیر عبدالقادر گیلانی کی خصوصی دعا

لندن (عدیل خان) مرکزی جماعت اہلسنت یوکے اینڈ اوورسیز ٹرسٹ کے بانی و سرپرست اعلیٰ مفکر اسلام علامہ ڈاکٹر پیر سید عبدالقادر گیلانی نے کہا ہے کہ علم سرچشمہ نور و عرفان اور منبع ہدایت و حکمت ہے، اس سے نسل انسانی ارتقا پاتی اور قوی بقا حاصل کرتی ہے، علم ہی اخلاق کو جلا بخشا ہے اور کردار کی تعمیر کرتا ہے اور سیرت کو نکھارتا ہے، علم ہی انسان کو انسانی اطوار سکھاتا ہے اور عظمتوں سے ہمکنار کرتا ہے، یہ علم ہی ہے جس نے ابو البشر سیدنا آدم علیہ السلام کو سجود ملائکہ بنایا، اسی لیے علما کو اسلام میں بڑی اہمیت دی گئی ہے اور انہیں قدر کی نگاہ سے دیکھا گیا ہے، خود رب العزت نے قرآن پاک میں ارشاد فرمایا ہے، کیا عالم اور جاہل برابر ہوسکتے ہیں ،ایک اور مقام پر ارشاد فرمایا اللہ تعالیٰ مومنوں کو عظمت سے ہمکنار کرے گااورجو اہل علم ہیں انہیں دو،چار نہیں بلکہ کئی درجات رحمت فرمائے گا، قرآن و حدیث میں علما کی بڑی شان بیان کی گئی ہے، خود سیدالانبیاء والمرسلین خاتم النبیین ﷺنے فرمایا کہ میری امت کے علما بنی اسرائیل کے انبیا کےبرابر ہیں۔
وہ والتھم سٹولندن میں اہلسنت کے ممتاز علمائے کرام اور مشائخ جو گزشتہ چند دنوں میں رحلت فرما گئے ، ان کے حوالے سے ایصال ثواب اور تعزیتی ریفرنس سے صدارتی خطاب کررہے تھے۔رحلت پانے والے علمائے کرام میں جانشین محدث اعظم پاکستان بقّتہ السلف پیر طریقت حضرت قاضی فضل رسول حیدرؒ، سیدالسادات خطیب کشمیر علامہ پیر سید غلام یٰسین شاہؒ، خطیب وکیل اہلبیت علامہ پیر ظہور احمد چشتی حیدری ؒشامل ہیں، پیر عبدالقادر نے کہا کہ یہ حضرات اہلسنت کے درخشاں ستارے تھے جنہوں نے اپنی ساری زندگی اسلام کی ترویج و اشاعت اور تبلیغ دین کیلئے صَرف کی۔
پیر عبدالقادر گیلانی نے کہا کہ علمائے حق کی صداقت، دیانت، صالحیت ،بے نفسی، شفقت و محبت اور ایثار پسندی شک و شبہ سے بالاتر ہوتی ہے، وہ اپنی ذات سے زیادہ خلق خدا کی بہتری کے آرزومند ہوتے ہیں اور اس کیلئے شب و روز کام کرتے ہیں اور اس کا اجر اللہ تعالیٰ سے چاہتے ہیں کیونکہ وہ انبیا کرام کے پاکیزہ مشن کے نقیب ہوتے ہیں۔
مرکزی جماعت اہلسنت یوکے اینڈ اوورسیز ٹرسٹ کے جنرل سیکرٹری علامہ قاضی عبدالعزیز چشتی نے کہا کہ تاریخ شاید ہے کہ علما نے ہر دور میں انسانیت کی رہبری کیلئے رشد و ہدایت کی قندیلیں روشن کیں اور ہر حال میں حق و صداقت کے عَلم کو بلند رکھا۔

تعزیتی ریفرنس میں مرکزی جماعت اہل سنت یوکے اینڈ اوورسیز ٹرسٹ کے مرکزی قائدین پیر سید صابر حسین گیلانی، علامہ صاحبزادہ مفتی برکات احمد چشتی، علامہ صاحبزادہ پیر سید مظہر حسین گیلانی، علامہ پیر زادہ انور حسین کاظمی، علامہ مفتی محمد خان قادری، علامہ محمد ارشد جمیل، علامہ مفتی عبدالرحمن نقشبندی، علامہ صاحبزادہ نور احمد شاہ کاظمی، علامہ حافظ محمد فاروق چشتی، علامہ قاری واجد حسین چشتی، علامہ سید حیدر شاہ، علامہ قاضی عبدالرشید چشتی، علامہ حافظ محمد نذیر مہروی، حافظ مولانا محمد افضل چشتی، حافظ قاری محمد اشرف سیالوی، علامہ صاحبزادہ قاضی ضیاء المصطفیٰ چشتی، علامہ حافظ شاہ محمد چشتی، علامہ انعام الحق قادری، علامہ حافظ اشتیاق حسین قادری، علامہ حسنات احمد چشتی، علامہ حافظ عبدالغفور چشتی، علامہ ساجد لطیف قادری، خلیفہ الحاج عبدالرحمان چشتی، صاحبزادہ محمد ذیشان قادری ،الحاج صوفی محمد حسین قادری و دیگر شریک تھے۔

50% LikesVS
50% Dislikes