عوامی ردعمل سے متنفر پرنس ہیری اور میگھن نے سوشل میڈیا کو خیر باد کہہ دیا؛ اخبار کا دعویٰ – Kashmir Link London

عوامی ردعمل سے متنفر پرنس ہیری اور میگھن نے سوشل میڈیا کو خیر باد کہہ دیا؛ اخبار کا دعویٰ

لندن (عمران راجہ) ملکہ برطانیہ کے پوتے پرنس ہیری شاہی خاندان کا اٹوٹ انگ ہوتے ہوئے بھی اتنے ہی مقبول تھے جتنے وہ میگھن سے شادی کرکے شاہی خاندان سے الگ ہوکر ہیں، اسکی ایک ہی وجہ ہے انکی سادگی !!!
اپنی سادہ طبیعت اور ماں کی طرح فقیرانی طرز زندگی کی بدولت میڈیا اکثر انکی روزمرہ سے خبرین نکالنے کی تگ و دو میں رہتا ہے۔ برطانیہ کے معروگ اخبار ٹایمز نے خبر دی ہے کہ ہیری اور میگھن نے سوشل میڈیا سے دور رہنے کیلئے اپنے اکائونٹس ختم کردیئے ہیں۔

اخبار کا کہنا ہے کہ برطانوی شہزادہ ہیری اور ان کی اہلیہ میگھن مارکل نے سوشل میڈیا سائٹس پر اپنے ساتھ ہونے والے نسلی و صنفی امتیاز سے تنگ آکر سوشل میڈیا کو خیرباد کہا ہے۔
خبر کےمطابق جوڑے نے آفیشل انسٹاگرام پیج سمیت تمام ذاتی و پروفیشنل فیس بک و ٹوئٹر سمیت یوٹیوب چینل بھی بند کردیئے ہیں۔

رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا کہ شاہی جوڑا اپنی سماجی تنظیم آرچی کے لیے بھی پروفیشنل سوشل میڈیا اکاؤنٹس بنانے کا خواہاں نہیں ہے۔
اس خبر نے جہاں انکے لاکھوں چاہنے والوں کو اداس کردیا وہیں درجنوں اس خھوج میں لگ گئے کہ ایسا کیوں ہوا۔

کینیڈا کی ایم اخبار نے سب سے پہلے اس خبر کے حقائق جاننے کی کوشش کی اور عوام کو تسلی دی کہ یہ خبر ایک مفروضے سے بڑھ کر کچھ نہیں، اسکے ثبوت میں اس اخبار کا کہنا ہے کہ گذشتہ سال شاہی خاندان چھوڑنے سے قبل انکا ایک ہی انسٹاگرام اکائونٹ تھا جسکے دس ملین سے زائد فالوورز تھے۔
پرینس ہیری اور میگھن نے شاہی انداز چھوڑ کر عام زندگی بسر کرنے کے فیصلے کے بعد ایک پیغام کیساتھ اس اکائونٹ کو خیر باد کہہ دیا تھا۔

اسکے بعد وہ گاہے گاہے مختلف پروگرامز میں جدید ڈیجیٹل میڈیا کی افادیت اور عوامی حفاظت بارے گفتگو کیا کرتے تھے۔ اپنے والد کے ایک ادارے فاسٹ کمپنی میں دونوں نے باقاعدی ایک مہم میں ھصہ لیا جسکا مقصد تھا کہ نفع کیلئے نفرت کا ستعمال نہ کیا جائے، واضع رہے کہ سوشل میڈیا پر یہی کام سب سے زیادہ ہوتا ہے۔

اخبار کا مزید کہنا ہے کہ عرصہ دراز تک بغیر فیس بک، انسٹاگرام اور ٹویٹر کے زندگی گذارنے والے ہیری اور میگھن نے چند روز قبل ہی اپنے بیٹے آرچی کیساتھ اپنے پہلے پوڈ کاسٹ کو عام کیا تھا جس میں ننھے آرچی نے عوام کو نئے سال کی مبارکباد بھی دی تھی۔ اخبار کا ماننا ہے کہ ان تمام شواہد کی روشنی میں ہیری اور میگھن کی سوشل میڈیا سے دور رہنے کی خبر محض مفروضہ لگتی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes