المصطفیٰ ویلفیئر ٹرسٹ مشکل وقت میں حکومت اور این ایچ ایس کا ساتھ دینے میں پرعزم ہے؛ عبدالرزاق ساجد – Kashmir Link London

المصطفیٰ ویلفیئر ٹرسٹ مشکل وقت میں حکومت اور این ایچ ایس کا ساتھ دینے میں پرعزم ہے؛ عبدالرزاق ساجد

لندن (اکرم عابد) برطانیہ کی چیریٹی المصطفیٰ ویلفیئر ٹرسٹ نے کورونا وائرس ویکسین سے متعلق آگاہی مہم کا آغاز کردیا ہے، ٹرسٹ کے چیئرمین عبدالرزاق ساجد نے کہا ہے کہ ہماری کمیونٹی میں ویکسین لگوانے کے بارے میں افواہوں اور منفی تاثر کو دور کرنے کیلئے یہ انقلابی قدم اٹھایا ہے۔
ٹرسٹ کے چیئرمین نے کہا ہم نے اس کام کیلئے مختلف ذرائع استعمال کرنے کا فیصلہ کیا ہے جن میں ذرائع ابلاغ پر ویکسین کے بارے میں لوگوں کے ان سوالات کے جوابات دیئے گئے ہیں جو عام طور پر لوگوں کے ذہنوں میں موجود ہیں۔


عبدالرزاق ساجد نے کہا کہ ہم نے اس آگاہی مہم میں مساجد، ریستوران، فوڈ گھروں میں پہنچانے والی مختلف کمپنیز جن میں ’’ڈیلیورو‘‘ ، ’’جسٹ ایٹ‘‘ اور ’’اوبر‘‘ جیسی کمپنیز شامل ہیں، کو شریک کیا ہے، ہم نے ان تمام جگہوں پر اپنے یہ لیف لیٹس پہنچائے بھی ہیں اور ان سے یہ درخواست بھی کی ہے کہ وہ اس کام میں ہمارا ساتھ دیں، انہوں نے کہا یہ ہماری اخلاقی ذمہ داری بھی ہے کہ ہم اس ضمن میں پھیلائے گئے منفی پروپیگنڈے کا تدارک کریں۔

انکا کہنا تھا کہ ہم اس سلسلہ میں ہر ممکن کوشش کررہے ہیں کہ لوگ حقیقت جان سکیں، بہت سے لوگ سمجھتے ہیں کہ ویکسین لگوانے سے انسانی صحت کو ناقابل تلافی نقصان پہنچ سکتا ہے، ڈاکٹر لوگوں کو ویکسین لگوانے پر مجبور کررہے ہیں، کووڈ 19 نئی ٹیکنالوجی (G5) والے علاقوں میں زیادہ پھیل رہا ہے، اس ویکسین میں جانوروں کے اجزاء ہیں، یہ ویکسین حاملہ عورتوں کیلئے نقصان دہ ہے، ویکسین میں کوئی چپ لگائی گئی ہے، ویکسین عجلت میں بنائی یا منظور کی گئی ہے، ویکسین لگوانے سے ’’ڈی این اے‘‘ تبدیل ہوجائے گا، ویکسین لگوانے سے شدید مضر اثرات ہوسکتے ہیں وغیرہ وغیرہ۔ لیکن حقیقت یہ ہے کہ یہ سب باتیں افواہوں کے سوا کچھ نہیں ہیں۔

عندالرزاق ساجد کا کہنا تھا کہ ویکسین میں حلال و حرام کا معاملہ بھی نہیں ہے کیونکہ متعدد اسلامی سکالرز نے اس کا گہرا مطالعہ کیا ہے اور اسے محفوظ قرار دیا ہے، ہمیں یہ بھی یاد رکھنا چاہئے کہ برطانیہ میں سوا لاکھ سے زیادہ لوگوں کی موت ہوچکی ہے، انہوں نے کہا ’’المصطفیٰ ویلفیئر ٹرسٹ‘‘ کی کوشش ہے کہ اس قدرتی آفت اور مشکل وقت میں حکومت اور این ایچ ایس کا ساتھ دیتے ہوئے اپنے لوگوں کو اصل صورتحال سے باخبر رکھے تاکہ افواہوں کا تدراک ہوسکے۔

50% LikesVS
50% Dislikes