براڈ شیٹ انکوائری مکمل، غلط ادائیگیوں سمیت اہم ریکارڈ غائب ہونے کے انکشافات – Kashmir Link London

براڈ شیٹ انکوائری مکمل، غلط ادائیگیوں سمیت اہم ریکارڈ غائب ہونے کے انکشافات

لندن (مبین چوہدری) براڈ شیٹ کیس کی انکوائری میں ایک نیا موڑ سامنے آیا ہے جس میں ناصرف اس بات کو واضع کیا گیا ہے کہ متعلقہ کمپنی کو ادا کی گئی پندرہ لاکھ ڈالرز کی رقم غیر قانونی ادائیگی کی مد میں آتی ہے بلکہ یہ انکشاف بھی کیا گیا ہے کہ پاکستان ہائی کمیشن لندن میں اس رقم ی ادائیگی کے حوالے سے تمام شواہد بھی غائب کردیئے گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس ریٹائرڈ عظمت سعید شیخ کی سربراہی میں انکوائری کمیشن نے براڈ شیٹ معاملے کی تحقیقات مکمل کرلی ہیں، جس میں براڈ شیٹ کمپنی کو 15 لاکھ ڈالر کی غلط ادائیگی کا انکشاف کیا گیا ہے۔
رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ غلط شخص کو ادائیگی ریاست پاکستان کے ساتھ دھوکہ ہے، ادائیگی کو صرف بے احتیاطی قرار نہیں دیا جاسکتا، وزارت خزانہ، قانون، اٹارنی جنرل آفس سے فائلیں چوری ہوگئیں۔
رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستانی ہائی کمیشن لندن سے بھی ادائیگی کی فائل سے اندراج کا حصہ غائب ہوگیا، کمیشن کو تمام تفصیلات نیب کی دستاویزات سے ملی ہیں۔

واضح رہے کہ 29 جنوری کو قائم کردہ کمیشن نے براڈ شیٹ اور آئی اے آر کے انتخاب، تقرری اورمعاہدوں کی چھان بین سمیت براڈ شیٹ اور انٹرنیشنل ایسٹ ریکوری فرمز سے معاہدوں کی منسوخی کی وجوہات کی جانچ کرنی تھی۔ جبکہ اپوزیشن نے جسٹس ریٹائرڈ عظمت سعید کی سربراہی میں بننے والے کمیشن کو ماننے سے انکار کر دیا تھا۔

ذرائع کے مطابق براڈ شیٹ انکوائری کمیشن کی 100 صفحات پر مشتمل رپورٹ رواں ہفتے کسی بھی دن وفاقی حکومت کو بھجوا دی جائے گی۔

50% LikesVS
50% Dislikes