ممتاز مذہبی شخصیت، صدر نگینہ جامع مسجد اولڈہم الحاج محمد بشیر کی یاد میں تعزیتی اجلاس – Kashmir Link London

ممتاز مذہبی شخصیت، صدر نگینہ جامع مسجد اولڈہم الحاج محمد بشیر کی یاد میں تعزیتی اجلاس

اولڈہم (محمد فیاض بشیر) موت کی تلخ حقیقت سے کو ئی بھی جاندار شے انکار نہیں کر سکتی کب روح مسافر ہونی ہے اسکا علم صرف واحدہ لا شریک کی ذات ہی جانتی ہے جو انسان اپنی زندگی میں نیک اعمال دینی اور انسانیت کی خدمت کو اپنا طرہ امتیاز بناتے ہیں انکے چلے جانے کے بعد مخلوق خدا رب العالمین کی بارگاہ میں گواہی دیتی ہے کہ دنیا سے چلے جانے والے شخص کی دین اسلام اور انسانیت کی فلاح و بہبود کے لیے بلامعاوضہ کتنی خدمات ہیں ۔ برطانیہ کی ممتاز مذہبی سماجی اور کمیونٹی کی ہر دلعزیز شخصیت صدر نگینہ جامع مسجد اولڈہم الحاج محمد بشیر کی یاد میں رکھے گئے تعزیتی اجلاس اور ختم کل کے موقع پر مسجد کے خطیب جید عالم دین مولانا قاری خادم حسین چشتی، سابق مئیر عتیق الرحمٰن، صحافتی برادری سے تعلق رکھنے والے چوہدری محمد اسحاق، محبوب الٰہی بٹ، عارف چوہدری، راجہ سجاول حسین، عارف چوہدری و دیگر نے کیا۔ انکا مذید کہنا تھا کہ اگر آج ہر آنکھ اشکبار ہے تو اسکی وجہ یہی ہے کہ الحاج محمد بشیر بچوں سے لیکر ادھیڑ عمر کے افراد تک انتہائی شفقت محبت سے پیش آتے اور ضرورت مندوں کی مدد میں کبھی پیچھے نہ رہتے انکے نیک اعمال رب العالمین کی بارگاہ اقدس میں قبولیت کا افضل ترین درجہ پائیں گے ہم اہل خانہ،دوست احباب عزیز واقارب کے غم میں برابر شریک ہیں ۔

یاد رہے الحاج محمد بشیر جوانی کی عمر میں 1961 کو برطانیہ آئے اس وقت پاکستان اور آزاد کشمیر سے برطانیہ روزگار کے لیے آئے افراد کی اکثریت ان پڑھ تھی الحاج محمد بشیر نے کمیونٹی کے افراد کی ہر طرح سے رضاکارانہ خدمت کی پھر وہ مڈلینڈ برطانیہ سے نارتھ ویسٹ منتقل ہو گئے اور یہاں کی کمیونٹی کے لیے بے لوث رضاکارانہ خدمات انجام دیں۔اولڈہم کے علاقہ میں قائم کاپس کمیونٹی سنٹر کے چئیرمن رہے اسکے بعد پچھلے چودہ برس سے نگینہ جامع مسجد ورنتھ ہال روڈ اولڈہم کے صدر تھے مسجد کے انتظامی امور پر کبھی سمجھوتہ نہیں کیاہمیشہ حق سچ کو اپنایا،یتیموں غریبوں کی رازداری سے کفالت کرتے رہے ، کبھی کسی سے ذاتی عناد کا رویہ نہیں آیا ہر عمر کے افراد سے دوستانہ رویہ اپنایا انکی کمیونٹی کے لیے رضا کارانہ بے لوث خدمات تاریخ میں سنہرے حروف سے لکھی جائیں گی ۔

تعزیتی اجلاس کا آغاز تلاوت قرآن پاک سے ہوا قاری شبیر احمد نے اپنی پرسوز آواز میں حاضرین مجلس کی روح کو جلا بخشی۔ نظامت کے فرائض مولانا قاری خادم حسین چشتی نے انجام دے ۔ تعزیتی اجلاس میں چوہدری محمد بشیر رٹوی، راجہ مقصود حسین کاکڑوی، سردار امجد اشرف، پیر اعجاز احمد، مرحوم کے چھوٹے بھائی حاجی محمد نذیر، بھانجوں بھتیجوں قریبی رفقا دوست احباب رشتہ داروں نے شرکت کی۔ الحاج محمد بشیر کے بڑے صاحب زادے محمد فیاض بشیر نے اپنے بھائ محمد اعجاز بشیر اور دیگر اہل خانہ کی طرف سے تمام احباب کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے دکھ کرب کے ان لمحات میں انکے غم کو بانٹا۔

50% LikesVS
50% Dislikes