جموں کشمیر تحریک حق خودارادیت کے رہنمائوں کی برطانوی حکمران پارٹی کے ممبران پارلیمنٹ سے میٹنگ – Kashmir Link London

جموں کشمیر تحریک حق خودارادیت کے رہنمائوں کی برطانوی حکمران پارٹی کے ممبران پارلیمنٹ سے میٹنگ

مانچسٹر (محمد فیاض بشیر ) برطانیہ کی حکمران جماعت کنزرویٹو پارٹی کے ممبران کے ساتھ جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین اور ڈائریکٹر پروگرامز ہیری بوٹا کی ویڈیو لنک کے ذریعے میٹنگ ،حکمران جماعت کے کنزرویٹو پارٹی کے پالیمنٹیرین ایم پی فلپ ڈیوس اور ایم پی رابی مور سے کشمیر کی صورتحال اور برطانیہ میں کشمیر کے حوالے سے ہونے والی سرگرمیوں ، پارلیمنٹ کے اندر اور باہر کوششوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

دونوں برطانوی اراکین پارلیمنٹ ایم پی فلپ ڈیوس اور ایم پی رابی مورنے کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی حمایت کی، کشمیر کی صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو روکنے اور کشمیریوں کو ان کے تمام حقوق دینے کا مطالبہ کیا ۔ دونوں ممبران پارلیمنٹ نے برطانیہ میں پارلیمنٹ کے اندر اور باہر اور بالخصوص حکمران جماعت میں کشمیریوں کی آواز بلند کرنے اور حکمران جماعت میں کنزرویٹو فرینڈز آف کشمیر میں شمولیت اورگروپ کو مستحکم کرنے کے لئے ایم پی جیمز ڈیلی اور ایم پی پال برسٹو کے ساتھ مکمل تعاون کرنے اور کام کرنے کا عزم کیا ۔ دونوں ممبران کا کنزرویٹو فرینڈز آف کشمیر میں بھی شمولیت کا وعدہ ۔

دونوں ممبران مستقبل قریب میں راجہ نجابت حسین اور ان کی ٹیم جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت کے زیر اہتمام ویڈیو کانفرنس میں بھی شرکت کریں گے۔ اس موقع پر چیئرمین تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل راجہ نجابت حسین نے حکمران جماعت کے پارلیمنٹیرینز کو کشمیر کی صورتحال ، بھارت کے غیر آئینی اقدامات اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں بارے میں بریفنگ دی ۔


راجہ نجابت حسین اور ہیری بوٹا نے کہا کہ کشمیر میں بھارت مسلسل سفاکیت اور بربریت کا مظاہرہ کر رہا ہے جبکہ عالمی امن ، استحکام اور انسانی حقوق کے ادارے اور علمبردار ممالک خاموش ہیں ۔ بھارت تمام تر بین الالقوامی قوانین ، معاہدوں اور انسانی حقوق کے چارٹرڈ کو سبوتاژ کر رہا ہے لیکن اقوام متحدہ سمیت کسی ادارے کا سخٹ نوٹس نہ لینا افسوسناک ہے ۔برطانوی حکومت کشمیر میں انسانی حقوق کی بحالی اور کشمیریوں کو حق خود ارادیت دلانے کے لئے اپنا کلیدی کردار ادا کرے ۔ ممبران پارلیمنٹ بھی اپنی حکومت پر دبائو ڈالیں ۔ اس موقع پر راجہ نجابت حسین اور ہیری بوٹا نے دونوں ممبران پارلیمنٹ سے کہا کہ وہ کنزرویٹو فرینڈز آف کشمیر گروپ میں شامل ہونے کے ساتھ ساتھ پارٹی کے دوسرے ارکان کو بھی اس مہم کا حصہ بننے کی ترغیب دیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes