کشمیری لائیوز میٹر؛ مانچسٹر میں پوسٹرز سے سجی کاریں سڑکوں پہ دوڑنے لگیں – Kashmir Link London

کشمیری لائیوز میٹر؛ مانچسٹر میں پوسٹرز سے سجی کاریں سڑکوں پہ دوڑنے لگیں

مانچسٹر (محمد فیاض بشیر) مقبوضہ کشمیر کے مظلوم عوام سے اظہار یکجہتی کیلئے مانچسٹر سے تعلق رکھنے والے برٹش پاکستانی بزنس مین محمد رفاقت نے اپنی متعدد گاڑیوں پر کشمیر سے متعلق پوسٹرز اور نعرے درج کروا دیئے تاکہ دنیا کو کشمیریوں کی اصل صورتحال کا علم ہو۔

محمد رفاقت پرائیوٹ کرائے پر چلنے والی کم وبیش 100گاڑیوں کے مالک ہیں جو مانچسٹر میں چلتی ہیں اور ٹیکسی اور اشیا کی ترسیل کی خدمات انجام دیتی ہیں، ان کی گاڑیوں پر نقش پوسٹرز پر کشمیریوں کی زندگی بھی اہمیت رکھتی ہے،بھارتی کشمیر میں قتل عام بند کرو،کشمیر پر سے بھارتی قبضہ ختم کرو جیسے نعروں سمیت ہلاکتوں اور مصائب کے اعداد و شمار بھی درج ہیں۔


اس تحریک بار میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ یہ کاریں مانچسٹر اور قریبی علاقوں میں آتی جاتی ہیں اس طرح توقع ہے کہ روزانہ ہزاروں افراد اسے دیکھیں گے ،اصل مقصد انگلش کمیونٹی اور دوسروں کو یہ بتاناہے کہ کشمیریوں کی زندگی بھی اہمیت رکھتی ہے۔
انھوں نے کہا کہ میں نے یہ محسوس کرتے ہوئے مغربی ممالک تنازعہ کشمیر سے واقف نہیں ہیں یا مغربی ممالک کے لوگ اس مسئلے کے بارے میں زیادہ کچھ نہیں جانتے،انھوں نے کہا کہ ان کی کمپین میں صرف عام آدمی کے مصائب کو اجاگر کیاگیا ہے یہ لوگ بھارت کی جانب سے مسلسل ظلم کا شکار ہیں۔


محمد رفاقت نے حال میں چلنے والی کمپین سیاہ فاموں کی زندگی بھی اہمیت رکھتی ہے سے متاثر ہوکر یہ کشمیریوں پر بھارتی مظالم اور ان کے قتل عام سے دنیا کو واقف کرانے کیلئے یہ کمپین شروع کی ہے۔
انکا کہنا تھا کہ میں’’سیاہ فاموں کی زندگی بھی اہمیت رکھتی ہے‘‘ مہم کو بہت پسند کرتاہوں یہ تحریک سیاہ فام لوگوں کیلئے ہے یہ بہت سادہ اور موثر ہے اسی نظریئے کے تحت میں نے کشمیر کے مسئلے کو اجاگر کیا ہے اور دنیا کو بتانے کی کوششکررہا ہوں کہ کشمیریوں کی زندگیاں بھی معنی رکھتی ہیں۔


انکا کہنا تھا کہ وہ کشمیر میں اپنے بھائیوں کیلئے سب کچھ کرنے کوتیار ہیں حالیہ کمپین اسکی ابتدا ہے جس میں میں نے لوگوں کے ضمیر کوجگانے کی کوشش کی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes