جموں کشمیر تحریک حق خودارادیت کے سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کی ری لانچنگ – Kashmir Link London

جموں کشمیر تحریک حق خودارادیت کے سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کی ری لانچنگ

مانچسٹر (محمد فیاض بشیر) برطانیہ اور یورپ کے اندر تحریک حق خودارادیت کی ٹیم نے ممبران پارلیمنٹ اور رائے عامہ کے نمائندوں کے ساتھ جو مضبوط روابط قائم کر رکھے ہیں اس سے یقینا ریاست جموں وکشمیر کے عوام کی اپنے بنیادی حق خودارادیت کے حصول کی جدو جہد کو بھرپور تقویت مل رہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار صدرآزاد جموں وکشمیر سردار مسعود خان ، چئیرمین کشمیر کمیٹی شہر یار خان آفریدی، ڈائریکٹر جنرل جموں وکشمیر لبریشن سیل فدا حسین کیانی اور تحریک حق خودارادیت کے جنرل سیکرٹری محمد اعظم خان نے جموں وکشمیر تحریک حق خودارادیت انٹرنیشنل کی ویب سائٹ اوردیگر سوشل میڈیا پیجز کی دوبارہ لانچنگ کی ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

تقریب کا اہتمام یوتھ پارلیمنٹ پاکستان اور پاکستان افئیرز میڈیا ٹیم کے تعاون سے کیا گیا تھا جسکی صدارت یوتھ پارلیمنٹ پاکستان کے صدر عبید الرحمان قریشی نے کی۔ جبکہ برطانوی ممبران پارلیمنٹ ڈیبی ابرہامس ایم پی چیئر پرسن آل پارٹیز پارلیمانی کشمیر گروپ ، اینڈریو گیوین ایم پی چیئرمین لیبر فرینڈز آف کشمیر ، جیمس ڈیلی ایم پی شریک چیئر کنزرویٹو فرینڈز آف کشمیر،پال برسٹو رکن پارلیمنٹ شریک چیئرکنزرویٹو دوست کشمیر، افضل خان ایم پی شیڈو ڈپٹی لیڈرآف ہاس آف کامنز، لارڈ واجد خان ، لارڈ ٹموتھ کرکھوپے ، یلیکس نورس رکن پارلیمنٹ ، رکن پارلیمنٹ محترمہ انتھیہ میکانٹیئر سابق چیئر پرسن فرینڈز آف کشمیر، یوروپی پارلیمنٹ میں سابقہ لیبر لیڈر رچرڈ کاربیٹ۔یورپین پارلیمنٹ مین ساب لبر ڈیموکریٹ لیڈر سابق ایم ای پی لبرل ڈیموکریٹ شفق محمد ،سابق ممبر یورپی پارلیمنٹ جولی وارڈ، سابق ممبریورپین پارلیمنٹ امجد بشیرنے وڈیو لنک کے ذریعے راجہ نجابت حسین اور ان کی تنظیم کو خراج تحسین پیش کیا۔

انکا کہنا تھا کہ تحریک حق خودارادیت کی ٹیم نے راجہ نجابت کی قیادت میں برطانوی اور یورپی پارلیمنٹ کے اندر مسئلہ کشمیر کی آگاہی اور تفہیم کے لئے انتہائی موثر کام کیا ہے ، اور ہم انہیں یقین دلاتے ہیں کہ مستقبل میں بھی ان کے ساتھ تعاون جاری رکھتے ہوئے کشمیریوں کے بنیادی حق خودارادیت کے حصول کے لئے اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے۔

ڈیجیٹل پلیٹ فارمز دوبارہ لانچ کرنے کی اس تقریب میں چودھری اعجاز احمد سابق ایم این اے ، ممبراسمبلی آزادکشمیرنسیمہ وانی ایم ایل اے، ممبر کشمیرکونسل محمد یونس میر، ڈائریکٹر جنرل جموں کشمیر لبریشن سیل فدا حسین کیانی ، حریت رہنما اشتیاق حمید ، گلشن منہاس رہنما پی ٹی آئی ، عبدالقادرچیئرمین یوتھ ایسوسی ایشن آف پاکستان ، محمد اعظم سیکرٹری تحریک حق خودارادیت ، مسٹر طاہراعوان کوآرڈینیٹر یو ایس اے ، قیرنجیب ایڈووکیٹ رہنما مسلم لیگ ن ، انسانی حقوق کی سرگرم رہنما زوبیہ راجہ ، مریم ادریس ، مہتاب انجم، دعا صدیقی کے علاوہ مختلف این جی اوز اور سماجی تنظیموں کے نمائندگان نے شرکت کی۔

چئیرمین تحریک حق خودارادیت انٹرنیشنل راجہ نجابت حسین نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تحریک حق خودارادیت گزشتہ گیارہ سال سے برطانیہ اور یورپ کے اندر مسئلہ کشمیر پر کام کر رہی ہے اور ہماری ٹیم نے اس عرصے میں برطانوی اور یورپین پارلیمنٹس کے اندر بھرپور کامیابیاں حاصل کرتے ہوئے ممبران پارلیمنٹ کی نہ صرف کشمیریوں کے حق خودارادیت پر ان کی حمایت حاصل کی بلکہ ان ایوانوں کے اندر کشمیر دوست گروپ قائم کرنے میں بھی اپنا بھرپور کرادا کیا ہے اور آج یورپی پارلیمان اور برطانوی ہاوس آف کامنز میں کشمیریوں کے مسئلے پر معتدد بار بحث ان کاوشوں کا نتیجہ ہے۔

راجہ نجابت نے کہا کہ موجودہ دور کے تقاضوں کے مطابق ہماری تنظیم نے سوشل میڈیا اور ویب پیجز کے ذریعے کشمیریوں کی آواز کو مزید موثر انداز میں اجاگر کرنے کے لئے ہم آہنگ کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اج ضرورت اس بات کی ہے کہ مقبوضہ جموں وکشمیر میں ہندوستانی فورسز کے مظالم کا شکار عوام اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو اجاگر کیا جائے تاکہ دنیا کو یہ باور کرایا جا سکے کہ کشمیری عوام اپنے حق خودارادیت کے حصول تک جہدو جہد جاری رکھیں گے اور ان کی خواہشات کے مطابق اس مسلے کا حل تک خطے میں پائیدار امن کا قیام ممکن نہیں ہو سکتا۔

50% LikesVS
50% Dislikes