آنجہانی پرنس فلپ کرکٹ کے دیوانے اور باصلاحیت آل راؤنڈر بھی تھے، ای سی بی کا خراج عقیدت – Kashmir Link London

آنجہانی پرنس فلپ کرکٹ کے دیوانے اور باصلاحیت آل راؤنڈر بھی تھے، ای سی بی کا خراج عقیدت

لندن (سپورٹس ڈیسک) ملکہ برطانیہ کے آنجہانی شوہر ڈیوک آف ایڈنبرا پرنس فلپ شہزادہ فِلپ نے کھیلوں کے فروغ کیلئے تاریخی اقدامات کئے، وہ شاہی خاندان کے اب تک کے بہترین کرکٹر رہے، وہ کرکٹ کے دیوانے ہونے کے ساتھ ساتھ باصلاحیت آل راؤنڈر بھی تھے۔ ان خدمات کے پیش نظر ان کی موت پرانگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ نے انہیں شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔

ڈیوک نے دو دفعہ (1949-50 اور 1974-75) ایم سی سی کے صدر کی حیثیت سے اپنی خدمات انجام دیں اور ایم سی سی کے اعزازی رکن بنے۔

ان کو بچپن ہی سے کرکٹ سے بے لوث محبت تھی، انہوں نے اسکول کے زمانے سے ہی کرکٹ کھیلنا شروع کیا اور گورڈن اسٹوون اسکول کی پہلی ٹیم میں کپتانی کے فرائض بھی انجام دیئے۔ کہا جا تا ہے کہ وہ ٹینس لان، ونڈ شیم مور میں نوکروں کے ساتھ کرکٹ پریکٹس کرتے تھے، فلپ اور ان کی اہلیہ ملکہ ایلزبتھ دوم پہلے ونڈ شیم مور میں رہا کرتے تھے۔

پرنس فلپ کرکٹ سے محبت کی وجہ سے نیشنل پلیئنگ فیلڈز ایسوسی ایشن (این پی ایف اے) سے وابستہ ہوئے اور 1947 سے 2013 تک وہ این پی ایف اے کے صدر کے عہدے پر فائز رہے ۔ 2013 میں ان کے پوتے ڈیوک آف کیمیرج، پرنس ولیم کوان کا جانشین مقرر کیا گیا۔

پرنس فلپ لارڈز ٹریورنرز (یو کے یوتھ کرکٹ اینڈ ڈس ایبلٹی اسپورٹس چیئریٹی) کے پیٹرن چیف رہے اور آخری لمحے تک کرکٹ کے فروغ کیلئے کام کرتےرہے۔ انہوں نے ٹریورنرز الیون ٹیم کی نمائندگی بھی کی اور اس چیئریٹی کے سرپرست اعلیٰ بھی رہے۔ انہوں نے لارڈر ٹریورنرز ای سی بی ٹرافی بھی متعارف کروائی۔

50% LikesVS
50% Dislikes