پاکستان کرکٹ بورڈ نے پی ایس ایل کے بقیہ میچز کا شیڈول اور ہال آف دی فیم پوسٹر جاری کردیا – Kashmir Link London

پاکستان کرکٹ بورڈ نے پی ایس ایل کے بقیہ میچز کا شیڈول اور ہال آف دی فیم پوسٹر جاری کردیا

لندن (مسرت اقبال) پاکستان کرکٹ بورڈ نے پاکستان سپر لیگ کے بقیہ میچز کا حتمی شیڈول جاری کردیا ہے جسکے مطابق میچز یکم جون سے شروع ہونگے جبکہ فائنل 20 جون کو کھیلا جائے گا۔

پی سی بی کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ تمام ٹیمیں 22 مئی سے 7 دن کا قرنطینہ کریں گی اور 29 مئی سے تین دن تک پریکٹس سیشنز ہوں گے۔ ایونٹ کے تمام شرکاء کے لیے 22 مئی سےایک ہی ہوٹل میں قرنطینہ کی 7 روزہ مدت کا آغاز کیا جائے گا۔
تین روزہ ٹریننگ سیشنز کے بعد یکم جون سے ایونٹ شروع ہوجائے گا۔ ٹورنامنٹ کا فائنل 20 جون کو کھیلا جائے گا۔

ٹورنامنٹ کے بقیہ 20 میچز کا نیا شیڈول مندرجہ ذیل ہے:
یکم جون: لاہور قلندرز بمقابلہ اسلام آباد یونائیٹڈ (نائٹ)
2 جون: ملتان سلطانز بمقابلہ کراچی کنگز (نائٹ)
3 جون: اسلام آباد یونائیٹڈ بمقابلہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز (نائٹ)
4 جون: پشاور زلمی بمقابلہ لاہور قلندرز (نائٹ)
5 جون: اسلام آباد یونائیٹڈ بمقابلہ کراچی کنگز (ڈے)، ملتان سلطانز بمقابلہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز (نائٹ)
6 جون: پشاور زلمی بمقابلہ کراچی کنگز (نائٹ)
7 جون: کوئٹہ گلیڈی ایٹرز بمقابلہ لاہور قلندرز (نائٹ)
8 جون: ملتان سلطانز بمقابلہ پشاور زلمی (نائٹ)
9 جون: اسلام آباد یونائیٹڈ اور لاہور قلندرز (نائٹ)
10 جون: کوئٹہ گلیڈی ایٹرز بمقابلہ کراچی کنگز (نائٹ)
11 جون: ملتان سلطانز بمقابلہ اسلام آباد یونائیٹڈ (نائٹ)
12 جون: کوئٹہ گلیڈی ایٹرز بمقابلہ پشاور زلمی (ڈے)
کراچی کنگز بمقابلہ لاہور قلندرز (نائٹ)
13 جون: اسلام آباد یونائٹڈ بمقابلہ پشاور زلمی (نائٹ)
14 جون: ملتان سلطانز بمقابلہ لاہور قلندرز (نائٹ)
16 جون: کوالیفائر(1 بمقابلہ 2) (نائٹ)
17 جون: ایلیمینیٹر1(3 بمقابلہ4) (نائٹ)
18 جون: ایلیمینیٹر 2 (کوالیفائر ہارنے والی ٹیم بمقابلہ ایلیمینٹر 1 کی فاتح ٹیم) (نائٹ)
20 جون: فائنل (نائٹ)

پی ایس ایل میچز کی حتمی منظور پی سی بی کے بورڈ آف گورنرز کے دو روزہ آن لائن اجلاس میں دی گئی، اس موقع پر ہال آف دی فیم بھی لانچ کیا گیا جس میں معروف کرکٹرز حنیف محمد، عمران خان، جاوید میانداد، ظہیر عباس، وسیم اکرم اور وقار یونس کی تاریخی تصاویر سمیت نادر اشیا نمائش کیلئے رکھی گئیں ہیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes