انگلینڈ میں مقامی کونسلز انتخابات میں امیدواروں کی سرگرمیاں عروج پر، سب اپنی اپنی جیت کیلئے پرامید – Kashmir Link London

انگلینڈ میں مقامی کونسلز انتخابات میں امیدواروں کی سرگرمیاں عروج پر، سب اپنی اپنی جیت کیلئے پرامید

مانچسٹر (محمد فیاض بشیر) برطانیہ بھر میں 6 مئی کو ہونے والے بلدیاتی اِنتخابات کے لیے گہما گہمی آپنے عروج پر ہے جوں جوں الیکشن کا دِن قریب آرہا ہے اُمیدواروں کے دِلوں کی دھڑکنیں تیز ہوتی جارہی ہیں ۔۔
مانچسٹر سِٹی کونسل کی وارڈ چیتھم ہِل کے لیے کنزروٹیو پارٹی کے اُمیدوار ارباب خان آپنی جیت کے لیے پُر اُمید ہیں ارباب خان پاکستان کی مقتدر فیملی کے چشم و چراغ ہیں انکے والد پاکستان کے تاریخی سپرٹیڈنٹ جیل رہے ہیں جنکو انکی اعلی کارگردگی کی وجہ سے کئی نیشنل اور انٹرنیشنل ایوارڈ سے نوازا جا چکا ہے ۔

ارباب خان آپنی جیت کے لیے پُر اُمید ہیں سابق ممبر آف یورپین پارلیمنٹ اور کنزروٹیو پارٹی کے رُکن ڈاکٹر سجاد کریم بھی کنزروٹیو پارٹی کے اِن اُمیدوارں کی الیکشن مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہے ہیں۔
چیتھم ہِل سے لیبر پارٹی کے اُمیدوار شوکت علی کے مقابلے میں کنزروٹیو پارٹی کے ارباب خان کا کہنا ہے کہ اُن کے الیکشن میں حصہ لینے کا مقصد چیتھم ہِل وارڈ میں تبدیلی لانا اور عوام اور حکومت کے درمیان ایک پُل کا کردار ادا کرنا ہے۔عوام نے اگر مجھے منتخب کیا تو چیتھم ہل کے علاقے میں انقلابی تبدیلیاں لاؤں گا۔
مانچسٹر سِٹی کونسل کی وارڈ کرمپسل سے لیبر پارٹی کی اُمیدوار نسرین بی بی علی کے مدِ مُقابل کنزروٹیو پارٹی کے اُمیدوار اِفتخار بٹ بھی آپنی کامیابی کے لیے بڑے پُر اُمید ہیں اُن کا کہنا ہے کہ لیبر پارٹی نے کرمپسل وارڈ کے لیے آجتک کوئی کام نہیں کیا لوگ آپنی بُنیادی سہولتوں سے بھی مرحوم ہیں۔

ارباب خان اور اِفتخار بٹ کی اِنتخابی مہم میں حصہ لینے والے آفراد کا کہنا تھا کہ پچھلے بیس سالوں سے چیتھم ہِل اور کرمپسل میں لیبر پارٹی کی کارکردگی صفر رہی ہے اور ہم اُمید کرتے ہیں کہ اِس الیکشن میں کنزروٹیو پارٹی اِن وارڈز میں جیت کر ضرور تبدیلی لائے گی۔
تمام پارٹیاں آپنی کامیابی کے لیے سر توڑ کوششوں میں مصروف ہیں لیکن کامیابی کا سہرا کِس کے ماتھے پر سجتا ہے یہ تو 6 مئی کی رات کو ہی پتہ چلے گا۔

50% LikesVS
50% Dislikes