افغانستان سے فرار ہوکر برطانیہ آنے والے خاندان کا پانچ سالہ بچہ ہوٹل کی کھڑکی سے گر کر جاں بحق – Kashmir Link London

افغانستان سے فرار ہوکر برطانیہ آنے والے خاندان کا پانچ سالہ بچہ ہوٹل کی کھڑکی سے گر کر جاں بحق

لندن (کشمیر لنک نیوز) بہتر مستقبل کی تلاش میں افغانستان سے فرار ہوکر برطانیہ پہنچنے والے خاندان کو صدمہ، پانچ سالہ بچہ ہوٹل کی کھڑکی سے گر کر پاراسرار طور پر جابحق، پولیس نے موت کی تصدیق کرتے ہوئے عینی شاہدین سے مدد کی اپیل۔

تفصیلات کے مطابق افغانستان میں طالبان کے قبضے کے بعد ملک چھوڑ کر جانے والے خاندان کا ایک پانچ سالہ افغان لڑکا محمد منیب مجیدی شیفیلڈ ہوٹل کی نویں منزل کی کھڑکی سے گر کر ہلاک ہوگیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے انہیں اطلاع ملی کہ ایک پانچ سالہ لڑکا دوپہر اڑھائی بجے شیفیلڈ میٹروپولیٹن ہوٹل کی کھڑکی سے گر گیا۔ لڑکے کے سوگوار خاندان کی تربیت یافتہ افسران مدد کر رہے ہیں۔

حیرت کی بات یہ ہے کہ جب یہ حادثہ پیش آیا اس وقت ہوٹل میں تمام عملہ موجود تھا اور اس میں سکیورٹی اور فائر وارڈنز بھی تھے۔ برطانوی حکومت افغانستان سے نقل مکانی کرنے والوں کو ایڈجسٹ کرنے کی تیز رفتار کوششوں میں مدد کے لیے اس ہوٹل کی رہائش کا استعمال کرتی رہی ہے۔

شیفیلڈ کی افغان کمیونٹی کی ایسوسی ایشن کے رکن ذبیح نے کہا کہ یہ بہت افسوسناک ہے۔ ہم خاندان کی مدد کے لیے ان سے ملنے جا رہے ہیں۔شیفیلڈ سٹی کونسل کے لیڈر ٹیری فاکس نے کہا میں بالکل دل شکستہ ہوں کہ ایک چھوٹا لڑکا اس طرح اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھا ہے۔ میری ہمدردیاں چھوٹے محمد کے خاندان کے ساتھ ہیں۔ میں تصور بھی نہیں سکتا کہ وہ کس کیفیت سے گزر رہے ہیں۔

شیفیلڈ اور گرد و نواح کے ممبران پارلیمنٹ نے اس حوالے سے وزیر اعظم برطانیہ کو خط کھ کر اس المناک واقعے کی غیرجانبدار انکوائیری کا مطالبہ بھی کردیا ہے۔ پناہ گزین کونسل کے چیف ایگزیکٹو انور سلیمان نے کہا کہ یہ ایک خوفناک سانحہ ہے اور ہماری ہمدردیاں اس خاندان کے ساتھ ہیں جو برطانیہ پہنچنے کے لیے بہت زیادہ صدمے اور مصائب سے گزرے ہیں۔ بہت ضروری ہے کہ ہوم آفس اس واقعے کی فوری تفتیش کرے۔

50% LikesVS
50% Dislikes