حکومت پاکستان میڈیا کو کنٹرول کرنے کیلئے نئی اتھارٹی کے قیام کا قانون لانا چاہتی ہے،ہیومن رائٹس واچ – Kashmir Link London

حکومت پاکستان میڈیا کو کنٹرول کرنے کیلئے نئی اتھارٹی کے قیام کا قانون لانا چاہتی ہے،ہیومن رائٹس واچ

لندن (کشمیر لنک نیوز) ہیومن رائٹس واچ نے خبردار کیا ہے کہ حکومت پاکستان ملک میں میڈیا کو کنٹرول کرنے، صحافیوں اور صحافتی اداروں کو سزا دینے کے لیے نئی اتھارٹی کے قیام کا قانون لانا چاہتی ہے۔

ایچ آر ڈبلیو نے مزید کہا کہ بل کے مندرجات کو خفیہ رکھا جا رہا ہے، میڈیا کو کنٹرول کرنے کے اقدامات کو فوری روکا جائے اور آزادی اظہار کو تحفظ فراہم کیا جائے۔

واشنگٹن میں پاکستانی سفارتخانے نے ہیومن رائٹس واچ کو جواب میں کہا ہے کہ حکومت پاکستان میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی کا قانون آرڈیننس کے ذریعے لانے کا کوئی ارادہ نہیں رکھتی، مجوزہ بل میں صحافیوں کو سزائیں دینے کا ذکر نہیں۔ سارے اسٹیک ہولڈرز سے بات کر رہے ہیں۔ ہیومن رائٹس واچ کی ایشیا کی ایسوسی ایٹ ڈائریکٹر نے پاکستانی سفارتخانے کو جواب دیا کہ آپ قانون کا مسودہ فراہم کرنے میں ناکام رہے ہیں۔

ادھر پاکستان میں صحافتی تنظیمیں پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس، آر آئی یو جے اور نیشنل پریس کلب کے مشترکہ تعاون سے پی ایم ڈی اے جیسے کالے قانون کے خلاف پارلیمنٹ کے سامنے احتجاج کیلئے تیار ہیں، اس سلسلے میں ایکشن کمیٹی تشکیل دی جاچکی ہے جسکی قیادت سابق صدر پی ایف یو جے افضل بٹ کررہے ہیں۔ جبکہ یورپ بھر میں اس احتجاج کو پھیلانے کیلئے پاکستان پریس کلب برطانیہ اس ایکشن کمیٹی کو اپنے بھرپور تعاون کی یقین دہانی کراچکی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes