تھرڈ ورلڈ سا لیڈ یریٹی کے زیراہتمام ”نائن الیون کا سبق، کیا ہم نے کچھ سیکھا”؟ کے موضوع پر سیمینار – Kashmir Link London

تھرڈ ورلڈ سا لیڈ یریٹی کے زیراہتمام ”نائن الیون کا سبق، کیا ہم نے کچھ سیکھا”؟ کے موضوع پر سیمینار

لندن (کشمیر لنک نیوز) تھرڈ ورلڈ سا لیڈ یریٹی کے زیراہتمام “نائن الیون کا سبق، کیا ہم نے کچھ سیکھا؟” کی عنوان سے ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا، جس میں معروف سیاسی وسماجی شخصیات کے علاوہ کونسلرز، میئرز اور ارکان پارلیمنٹ نے شرکت کی۔ تقریب سے تھرڈ ورلڈ سالیڈیریٹی کے چئیرمین مشتاق لاشاری، چئیرمین مارس و سابق رکن پارلیمنٹ ڈیو اینڈرسن، کیون ہولنریک رکن پارلیمنٹ، لز ٹوئسٹ رکن پارلیمنٹ، میری فوئے رکن پارلیمنٹ، کیٹ اوزبورن رکن پارلیمنٹ، ڈیوڈ واربرٹن رکن پارلیمنٹ، لارڈ واجد خان، کیتھ بینٹ، کریسٹینا بیکر، سلام سرہان اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے نائن الیون کے سیاسی، سماجی اور جنگ اثرات پر گفتگو کی۔

تقریب میں کونسلر ڈاکٹر عبدالغفور عزیز , مئیر سلاو محمد نذیر، کونسلر ریٹا بیگم، کونسلر ائین اینڈرسن، کونسلر کریما مریکار، کونسلر فیض الرحمان کے علاوہ معروف قانون دان بیرسٹر راشد اسلم، شاہد ندیم سندھو، رضوان سلہیریا، بیرسٹر ہما پرائس، رومانہ کوثر، میاں سلیم، رومی ملک، نعیم الفت کے ساتھ ساجد بٹ، کونسلر قیصر گوندل، رانا دین اور معروف فوٹوگرافر نسیم میر نے خصوصی شرکت کی۔

مزید برآں پاکستان کو ریڈ لسٹ سے نکالنے کے حوالے سے ایک قرارداد بھی پیش کی گئی جسے شرکاء نے منظور کرتے ہوئے برطانوی حکومت سے مطالبہ کیا کہ پاکستان کو فی الفور ریڈ لسٹ سے نکالا جائے۔ برطانوی وزیر گرانٹ شیپس کا کہنا تھا کہ برطانوی ادارے جائُٹ بائیو سیکورٹی سینٹر کے مطابق پاکستان کو ٹیسٹنگ، ویکسینیشن اور جینوم سیکوئسنگ کو بڑھانا ہو گا اور دونوں حکومتیں اس کے لئے کام کر رہی ہیں اور یہ خوش آئند ہے کہ پاکستان جلد از جلد ریڈ لسٹ سے باہر آسکے۔

50% LikesVS
50% Dislikes