20 سالہ اطالوی مسلم خاتون امیدوار ’شاندار‘ روم کے احیاء کے لیے پرامید – Kashmir Link London

20 سالہ اطالوی مسلم خاتون امیدوار ’شاندار‘ روم کے احیاء کے لیے پرامید

روم(کشمیر لنک نیوز)اٹلی میں مسلم لاء کی ایک 20 سالہ طالبہ روم کی سٹی کونسل کے سب سے کم عمر امیدوار کی حیثیت سے انتخاب لڑ رہی ہیں۔

عرب نیوز کی ایک رپورٹ کے مطابق مریم علی کا خاندان بنیادی طور پر مصر سے آیا ہے لیکن ان کی پیدائش اور پرورش اٹلی کے دارالحکومت روم میں ہوئی ہے۔مریم علی نے اپنی الیکشن مہم میں وعدہ کیا ہے کہ وہ اس شاندار شہر میں ان جوانوں، بوڑھوں اور ضرورت مندوں کی آواز بنیں گی جنہیں مدد ضرورت ہے۔

واضح رہے کہ روم کے نئے میئر اور سٹی کونسل کے انتخابات تین اور چار اکتوبر کو منعقد ہوں گے۔

مریم علی اپنی مہم میں ’ڈیجیٹل ہو گئی ہیں‘۔ وہ اپنے پیغام کو پھیلانے اور ووٹوں کے لیے مہم چلانے کے لیے سوشل میڈیا کو استعمال کرتی ہیں۔ انسٹاگرام پر ان کے تقریباً دو لاکھ اور ٹک ٹاک پر تقریباً 40 ہزار فالوئرز ہیں۔

مریم علی نے عرب نیوز کو بتایا کہ وہ اس مہم کے دوران ’بہت سے لوگوں سے ان کی ضروریات جاننے کے لیے مل رہی ہیں‘ اور یہ کہ وہ ’اس شاندار شہر کے بارے میں بہت کچھ سیکھ رہی ہیں۔وہ گلیوں میں پمفلٹس اور اشتہار تقسیم کر رہی ہیں جن میں انہیں حجاب پہنے ہوئے دکھایا گیا ہے اور ایسا پہناوا ان کا معمول ہے جس پر وہ فخر کرتی ہیں۔

انہوں نے کہا ’میں زیادہ سے زیادہ سیکھنے کے سفر پر ہوں۔ میرے والد نے مجھے بتایا کہ جب سے میں نے اپنی مہم شروع کی ہے میں علم کے لحاظ سے بہت زیادہ میچور ہو رہی ہوں۔‘

مریم علی ’ڈیمو-سالیڈیریٹی اینڈ ڈیموکریسی‘ پارٹی کے ساتھ بائیں بازو کے اتحاد کی امیدوار ہیں ، جو اپنی مہم میں سابق اطالوی وزیر خزانہ رابرٹو گوالٹیری کی حمایت کر رہی ہیں۔انہوں نے اپنے سوشل میڈیا پروفائلز پر اسلامی نقاب والی تصاویر لگا رکھی ہیں کیونکہ انہیں اپنے رسم و رواج پر فخر ہے کہ وہ ’مسیحی اکثریت والے ملک میں حجاب والی عورت‘ ہیں۔

مریم علی نے عرب نیوز کو بتایا کہ ’میں اٹلی میں مسلمانوں کی نمائندگی کے لیے کوشاں نہیں ہوں۔ میں ایک اطالوی اور رومن شہری کی حیثیت سے مقابلے کا حصہ ہوں اور میں ان نوجوانوں، بوڑھوں اور ضرورت مند لوگوں کو آواز دینا چاہتی ہوں جو میرے شہر میں رہتے ہیں۔‘

مریم علی مصری والدین کے ہاں اٹلی میں پیدا ہوئیں۔ ان کے والد سمیع سلیم روم کے جنوب میں واقع میگلیانہ کی مسجد میں امام ہیں اور ایک ٹریول ایجنسی چلاتے ہیں جو حج اور عمرہ کے لیے مکہ کی زیارت کا اہتمام کرتی ہے۔

مریم کی تین بہنوں میں سے ایک تسنیم علی ہیں۔ جو ایک انفلوئنسر ہیں۔ وہ ٹک ٹاک اور انسٹاگرام پر اپنے نوجوان فالوئرز کو اسلام کے بنیادی اصولوں اور اسلامی ثقافت کے رسم و رواج کے متعلق معلومات دیتی ہیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes