لا سوسائٹی آف انگلینڈ کا برٹش پاکستان نوجوان کے لئے سالیسٹرآف دی ائر 2021 ایوارڈ کا اعلان – Kashmir Link London

لا سوسائٹی آف انگلینڈ کا برٹش پاکستان نوجوان کے لئے سالیسٹرآف دی ائر 2021 ایوارڈ کا اعلان

لوٹن (کشمیر لنک نیوز) لبرٹی لا سالیسٹرز کے پرنسپل سالیسٹر عتیق ملک کو عدالت میں اپنے منفرد انداز اور بامعنی مدلل گفتگو کے باعث اس سال بہترین پرائیویٹ پریکٹس میں رنر اپ کا ایوارڈ دیا گیا ہے۔ انگلینڈ اینڈ ویلز لا سوسائیٹی کے پرائیویٹ پریکٹس سالیسٹر آف دی ائر 2021 ایوارڈ کی مستحق اینے کوانا رہیں جنہوں نے بچون اور ماں کے حوالے سے قابل قدر خدمات سرانجام دیں۔

لا سوسائیٹی کے زیراہتمام منعقدہ اس ورچوئل آن لائن تقریب میں بہترین وکلاء کو مختلف شعبوں میں نمایاں کارکردگی پر اعلیٰ ایوارڈز عطا کیے گئے، عتیق ملک ایڈووکیٹ کو بھی انکے ٹیلنٹ کے مطابق ایوارڈ دیا گیا۔ عتیق ملک ایڈووکیٹ نے ایوارڈ ملنے پر کہا کہ ان کے والد کی یہ خواہش پوری ہوگئی ہے جو چاہتے تھے کہ میں صرف ایک وکیل ہی نہ بنوں بلکہ اپنے فیلڈ میں منفرد کام کروں اور لیڈر بنوں۔

عتیق ملک نے لاء سوسائٹی آف انگلینڈ اور ویلز کے پینل کو اپنے شعبے میں کام کی مہارت، سخاوت اور ڈسکرمنیشن لاء کے ذریعے نظر انداز کیے گئے لوگوں کے قانونی حقوق اور انصاف دلانے کے لئے تگ و دو کرنے پر تعریف کی، انہوں نے پسماندہ لوگوں کو انصاف کی فراہمی کے لئے پبلک اتھارٹیز کو چیلنج کیا، تعلیمی اداروں میں طلباء کی قانونی کے شعبے میں مینٹرنگ، رہنمائی کی، اپنی آمدن کا ایک حصہ انصاف کے طالب مستحق لوگوں کے لئے وقف کیا۔

عتیق ملک مختلف امور پر ماہرانہ رائے کیلئے ٹی وی سکرین پر بھی تواتر سے آتے رہے اور برطانیہ کے ایشیائی وکلاء کے سیکرٹری کے طور پر بھی رول نبھایا، ایک جج نے کمنٹ کیا کہ عتیق ایک حوصلہ مند شخص ہیں جو سسٹم پر یقین رکھتے ہیں اور واضح کیا کہ یہ اچھے مقصد کے لیے جدوجہد کرتے ہیں، عتیق ملک نے اس ایوارڈ کو اپنے لیے اور اپنی فرم لبرٹی لا فرم لوٹن اور تمام کمیونٹی کے لیے اعزاز قرار دیا ہے اور اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ وہ سسٹم کے اندر رہتے ہوئے نظر انداز طبقات اور مستحق افراد کو انصاف کی فراہمی کے لیے جدوجہد کرتے رہیں گے۔

50% LikesVS
50% Dislikes