یارکشائر کے پاکستانی نژاد کرکٹر عظیم رفیق پارلیمنٹ کے روبرو پیش،نسلی تعصب پر بورس جانسن کی تنبیہ – Kashmir Link London

یارکشائر کے پاکستانی نژاد کرکٹر عظیم رفیق پارلیمنٹ کے روبرو پیش،نسلی تعصب پر بورس جانسن کی تنبیہ

لیڈز (کشمیر لنک نیوز) نسلی تعصب کا نشانہ بننے والے یارکشائیر کے سابق پاکستانی نژاد کھلاڑی عظیم رفیق کی پارلیمنٹ کی متعلقہ کمیٹی کے روبرو پیش ہونے اور حقائق بیان دینے کے بعد برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے انکی ہمت بندھاتے ہوئے کرکٹ بورڈز کو متنبہ کیا ہے کہ اس ملک میں نسلی تعصب کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔ انہوں نے عظیم رفیق کی ہمت یا داد دیتے ہوئے کہا کہ جہاں کہیں بھی ایسے مسائل ہیں انکا فوری تدارک ہونا چاہیئے۔

قبل ازین عظیم رفیق برطانوی پارلیمنٹ کی ڈیجیٹل، کلچر، میڈیا اینڈ اسپورٹس سلیکٹ کمیٹی کے سامنے پیش ہوئے تو اپنے ساتھ ہونے والے سلوک کے حالات بتاتے ہوئے متعدد بار آبدیدہ بھی ہوئے۔ انکا کہنا تھا کہ انھیں مسلسل لفظ “ پی” کا سامنا کرنا پڑا،خود کو تنہا اور الگ تھلگ محسوس کرتا تھا ،انہیں جب کپتان بنایا گیا تو ڈریسنگ روم کا ماحول خاصا زہریلا تھا،جو کچھ میرے ساتھ ہوا میں اس سلوک کا مستحق نہیں تھا، ایسا ماحول تھا کہ کسی مسلمان کھلاڑی کے روزہ کھنے پر اُسے ہر غلطی کا ذمہ دار ٹھہرایا جاتا تھا۔

یارکشائر کے سابق چئیرمین راجر ہیٹن اور ای سی بی کے چیف ایگزیکٹو ٹام ہیریسن بھی کمیٹی کے سامنے پیش ہونگے،عظیم رفیق کا مزید کہنا تھا کہ انگلش کرکٹ میں ’ادارے کی سطح پر‘ نسل پرستی موجود ہے۔ انھوں نے گواہی دیتے ہوئے جذباتی بیان میں کہا کہ جب 2017 میں ان کے ہاں مردہ بچہ پیدا ہوا تو کلب نے ان کے ساتھ بہت ’غیر انسانی‘ سلوک کیا، انھوں نے کہا کہ جن مسائل کا انہیں یارکشائر میں سامنا ہوا وہ ’بغیر کسی شک کے‘ ڈومیسٹک کرکٹ میں وسیع پیمانے پر پھیلے ہوئے ہیں رفیق نے کہا کہ وہ اپنا کیریئر نسل پرستی کے ہاتھوں کھو چکے ہیں، جو کہ ایک ’خوفناک احساس‘ ہے، لیکن اس کے متعلق کھل کر بولنے سے انھیں امید ہے کہ اگلے پانچ برسوں میں بڑے پیمانے پر تبدیلی آئے گی۔

انھوں نے مزید کہا میں صرف قبولیت چاہتا تھا، ایک معذرت، ایک ادراک، اور چلو مل کر کوشش کرتے ہیں کہ ایسا دوبارہ نہ ہو، میں اسے جانے نہیں دینا چاہتا تھا، چاہے مجھے جتنا بھی نقصان ہو جائے۔ میں بے آوازوں کی آواز بننے کے لیے پر عزم تھا، اس موقع پر وزیراعظم بورس جانسن نے کرکٹ حکام سے کہا ہے کہ وہ عظیم رفیق کے ارکان پارلیمنٹ کے ثبوت کے جواب میں فوری کارروائی کریں وزیر اعظم نے یارکشائر کاؤنٹی کرکٹ کلب میں نسل پرستی کے بارے میں بات کرنے میں عظیم رفیق کی ہمت کی تعریف کی۔انہوں نے کہا کہ برطانوی معاشرے میں نسل پرستی کی کوئی گنجائش نہیں، برطانوی کرکٹ اور یارکشائر کاؤنٹی کرکٹ کلب اس معاملے پر فوری کاروائی کرے۔

50% LikesVS
50% Dislikes