کائونٹی کرکٹ کی ایک تقریب میں ہاشم آملہ کو شراب نوشی پر مجبور کیا گیا؛ ویسٹ انڈین کرکٹر کا انکشاف – Kashmir Link London

کائونٹی کرکٹ کی ایک تقریب میں ہاشم آملہ کو شراب نوشی پر مجبور کیا گیا؛ ویسٹ انڈین کرکٹر کا انکشاف

لندن (مسرت اقبال) انگلیڈ میں یارکشائیر کائونٹی سے نسل پرستانہ رویوں کی خبریں باہر آنے کے بعد دنیا بھر میں رپورٹ ہونے والے ایسے واقعات کا تسلسل روز بروز بڑھتا جارہا ہے۔ ایک حالیہ انٹرویو میں ویسٹ انڈیز کے کرکٹر ٹینو بیسٹ نے انکشاف کیا ہے کہ ایک اور مسلمان کرکٹر ہاشم آملہ بھی برطانیہ میں نسلی تعصب کا نشانہ بن چکے ہیں۔

بی بی سی سپورٹس کو دیئے اپنے خصوصی انٹرویو میں ٹینو بیسٹ کا کہنا تھا کہ کائونٹی کرکٹ کی ایک تقریب میں جنوبی افریقن بلے باز ہاشم آملہ کوباربارشراب پینے پرمجبورکیا جاتا رہا۔ عام طور پر اپنے عام میں مگن رہنے والی سنجیدہ مزاج ہاشم آملہ کے منع کرنے کے باوجود ایک کھلاڑی اسے شراب پینے پر مجبور کرتا رہا۔

ایسی صورتحال میں ہاشم آملہ بڑی بردباری کا مظاہرہ کرتے ہوئے اسے شائستگی سے منع کرتے رہے لیکن وہ باز نہ آرہا تھا۔ ٹینو بیسٹ کا کہنا ہے کہ صورتحال دیکھ کر وہ آگے بڑھے اور انہوں نے تنگ کرنے والے کرکٹرکوکہا کہ ہاشم آملہ مسلمان ہے اور مسلمان شرب نہیں پیتے لیکن وہ پھر بھی باز نہیں آیا۔

ٹینوبیسٹ نے مزید کہا کہ کاؤنٹی کرکٹ میں شراب کلچرغالب ہے اورجواس کلچرکا حصہ نہیں بنتا اس کوچانس ملنا اور آگے بڑھنا بہت مشکل ہے۔ تاہم ایسے مسلمان کھلڑی بھی ہیں جنہوں نے شراب کو چھوا بھی نہیں اور نام اور مقام بناگئے۔

50% LikesVS
50% Dislikes