نمیبیا کے صدر ھیگ گینگوب سے لارڈ قربان حسین و دیگر کی ملاقات، باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال – Kashmir Link London

نمیبیا کے صدر ھیگ گینگوب سے لارڈ قربان حسین و دیگر کی ملاقات، باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال

لندن (کشمیر لنک نیوز) ستارہ قائداعظم پاکستانی اوریجن لارڈ قربان حسین نے نمیبیا کے صدر ھیگ گینگوب سے ملاقات کی اور ان کے ساتھ باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا ۔ نمیبیا کے صدر COP26 موسمیاتی تبدیلی کے بین الاقوامی اجلاس میں شرکت کے لیے برطانیہ آئےتھے۔ اس موقع پر ایڈم گلوبل کی جانب سے ان کے اعزاز میں ایک استقبالیہ بھی دیا گیا اور شرکاء کے ساتھ دیکھ بھال اور تعلیم، نوجوانوں، اور روزگار پر توجہ مرکوز کرنے والے نمیبیا کے ترقیاتی مسائل پر تبادلہ خیال کیا۔

لارڈ قربان حسین نے اپنے خطاب میں مشترکہ دلچسپی کے امور پر گفتگو کی ا اور نمیبیا کے صدر ھیگ گینگوب کو برطانیہ آمد پر خوش آمدید کہا۔ایڈم گلوبل نے نیٹ ورک کے عالمی وسائل پر روشنی ڈالی جو نمیبیا میں ان وجوہات کو آگے بڑھانے میں مددگار ثابت ہو سکتے ہیں۔ اس موقع پر صدر کا اپنے خطاب میں کہنا تھا کہ وہ ان توانائی کے وسائل اور صلاحیتوں کو دیکھ کر بہت خوش ہیں جو ایڈم گلوبل مہیا کرنے کے لیے تیار ہے ترقی کے مسائل حقیقی معنوں میں عالمی ہیں، اور ان سے نمٹنے میں کامیاب ہونے کے لیے عالمی شراکت داری کی ضرورت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ مخصوص شعبے دیکھے رہے ہیں جہاں ہم مل کر ترقی کر سکتے ہیں۔

ایڈم گلوبل کے بانی چیئرمین ڈاکٹر طاہر اختر نے کہا کہ ہم نمیبیا کے ایجنڈے کے بارے میں فرسٹ ہینڈ ہی معلومات فراہم کرنے پر صدر کے مشکور ہیں اور نمیبیا کے حکام کے ساتھ شراکت کے طریقوں پر بات کرنے کے موقع پر پرجوش ہیں تاکہ ہماری سروسز اور صلاحیت کے شعبوں جیسے کہ طب، قانون، ٹیکس اور اکاؤنٹنگ، اور کاروباری مشاورت سے مستفید ہوا جا سکے۔ صدر Hage Geingob کی سربراہی میں وفد اعلیٰ سطحی حکومتی ارکان پر مشتمل تھا ۔ایڈم گلوبل کی نمائندگی عالمی سفیر پال کلارک سمیت متعدد اراکین نے کی۔ شکریہ کے اپنے خطاب میں مسٹر کلارک نے کہا کہ یہ ہمارے سیارے (زمین) کے لیے ایک اہم ہفتہ ہے اور ہمیں COP26 سے فیصلے لینے اور انہیں حقیقت میں بدلنے کی ضرورت ہے۔ اس کے لیے حقیقی شراکت داری کی ضرورت ہے اور ایڈم گلوبل کے اراکین عالمی خاندان اور خاص طور پر نمیبیا کے لوگوں کے لیے ایک پائیدار مستقبل فراہم کرنے میں مدد کے لیے تیار ہیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes