لیجنڈ بالی وڈ اداکار نصیر الدین شاہ مودی سرکار کے مظالم پر پھٹ بڑے، خانہ جنگی کا خدشہ ظاہر کردیا

لندن (مونا بیگ) بھارتی فلم انڈسٹری کے سینئر اداکار نصیر الدین شاہ نے ملک میں خانہ جنگی کا خدشہ ظاہر کردیا، بالی وڈ اداکار نصیر الدین شاہ نے معروف صحافی کرن تھاپر کو ایک انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ہندو انتہا پسند بھارت کو مکمل خانہ جنگی کی طرف بھیج رہے ہیں۔ انٹرو یو میں انہوں نے کہا کہ 20 کروڑ مسلمانوں کا خاتمہ آسانی سے نہیں ہوسکتا، اگر مسلمانوں کی نسل کشی کی کوئی تحريک شروع ہوئی تو مسلمان بھرپور مقابلہ کر یں گے۔

نصیر الدین شاہ نے کہا کہ مسلمانوں کو دوسرے درجے کا شہری بنایا جا رہا ہے، مسلمانوں کو حا شیے پر لانے کی کوششیں اوپر یعنی اعلیٰ سطح سے کی جارہی ہیں۔ مسلمانوں میں خوف پیدا کرنے کی کوشش ہے لیکن مسلمان ہار نہیں مانیں گے، مسلمانوں کو اس کا سامنا کرنا پڑے گا کیونکہ ہمیں اپنا گھر بچانا ہے، ہمیں اپنے مادر وطن کو بچانا ہے، ہمیں اپنے خاندان کو بچانا ہے، ہمیں اپنے بچوں کو بچانا ہے۔ میں مذہب کی بات نہیں کر رہا ہوں۔ مذہب تو بہت آسانی سے خطرے میں پڑ جاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مسلم کشی پر بھارتی وزیر اعظم کی مکمل خا مو شی یہ ظاہر کرتی ہے کہ انہیں کوئی پرواہ نہیں ۔اداکار نے کہا کہ بی جے پی لڑاؤ اور حکمرانی کرو کی پالیسی پر چل رہی ہے، مسلمانوں کو ڈرایا جارہا ہے ہم ڈرنے والے نہیں ہیں جواب دیں گے۔انہوں نے کہا کہ مسجدیں اور گرجا گھر جلادیے جاتے ہیں تو کچھ نہیں ہوتا، مندر کو نقصان پہنچایا جائے تو فوری ایکشن ہوجاتا ہے۔

یاد رہے تین سال قبل بھی نصیرالدین شاہ نے ملک میں بڑھتی ہوئی مذہبی منافرت پر تشویش کا اظہار کیا تھا اور کہا تھا کہ یہ زہر پورے ملک میں پھیل چکا ہے اور اس کے جلد قابو میں آنے کے امکانات نظر نہیں آرہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں