کورونا کی نئی قسم اومی کرون پہلے والی ڈیلٹا سے کم خطرناک ہے؛ برطانوی تحقیق میں انکشاف – Kashmir Link London

کورونا کی نئی قسم اومی کرون پہلے والی ڈیلٹا سے کم خطرناک ہے؛ برطانوی تحقیق میں انکشاف

لندن (عمران راجہ) برطانیہ میں کورونا کی نئی قسم اومی کرون پر ہونے والی تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ یہ اس سے قبل حملہ آور ہونے والی قسم ڈیلٹا سے کم خطرناک ہے۔ تحقیقی رپقرٹ کے مطابق ڈیلٹا ویرینٹ کے مقابلے اومی کرون ویرینٹ سے متاثر افراد کا اسپتال میں داخل ہونے کا امکان تقریباً 50 فیصد کم ہے۔ جانوروں پر کی جانے والی تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ کورونا کے گزشتہ ویرینٹ کے مقابلےاومی کرون پھیپھڑوں کو کم نقصان پہنچاتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق اومی کرون سے تحفظ کے لیے ویکسین کی دو خوراک لگوانے والے افراد کا اسپتال میں داخل ہونے کا خطرہ 65 فیصد کم ہے۔ جن افراد نے ویکسین کی تین خوراک لگوائیں ان کے اسپتال میں داخل ہونے کی شرح انتہائی کم جبکہ غیر ویکسین شدہ افراد کے مقابلے بوسٹر ڈوز لگوانے والے افراد کا اسپتال میں داخل ہونے کا امکان 81 فیصد کم ہے۔ وزیر اعظم بورس جانسن نے بھی اسی تحقیق کا سہارا لیتے ہوئے عوام کو بوسٹر ڈوز جلد از جلد لگوانے کا مشورہ دیا ہے انکا کہنا تھا کہ ہسپتالوں کے آئی سی یو وارڈز میں اکثریت انکی ہے جنہوں نے ویکسینیشن میں کوتاہی برتی۔

50% LikesVS
50% Dislikes