دعا زہرا کی بازیابی کا احتجاج لندن تک پھیل گیا، پاکستان ہائی کمیشن کے باہر مظاہرہ – Kashmir Link London

دعا زہرا کی بازیابی کا احتجاج لندن تک پھیل گیا، پاکستان ہائی کمیشن کے باہر مظاہرہ

لندن (کشمیر لنک نیوز) دعا زہرہ کی عمر صرف14 برس ہے اور اسے اس کے والدین کے حوالے کیا جائے۔ یہ مطالبہ پاکستان ہائی کمیشن کے سامنے دعا زہرہ کے لیے ہونے والے مظاہرے کے شرکا نے کیا۔ دعا زہرہ کے ماموں سید علی کاظمی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ دعا زہرہ کے والدین کو انصاف فراہم کیا جائے، یہ مسئلہ صرف ایک دعا زہرہ کا نہیں بلکہ ہر پاکستانی بچے کا ہے، جب نادرا کے ریکارڈ سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ دعا کی عمر اس وقت صرف13برس تھی تو وہ کس طریقے سے ایک صوبے سے دوسرے صوبے پہنچی۔

اس حوالے سے شفاف ٹرائل کیا جائے اور ایک مثال قائم کی جائے کہ چھوٹے بچوں کے حقوق اور چائلڈ گرومنگ کے حوالے سے قوانین کیا ہیں تاکہ لوگوں کو احساس ہوسکے اور پاکستان میں تمام بچے محفوظ رہ سکیں۔ مظاہرے میں شریک علامہ ہاشم رضا غدیری نے کہا کہ ہم فیصلے کو قطعی طور پر مسترد کرتے ہیں ، اس معاملے کو سپریم کورٹ میں لے جایا جائے اور اس معاملے کو حل کرنے کے لیے ایک کمیشن تشکیل دیا جائے۔ سحرش شہباز نے اعلیٰ حکام سے اپیل کی کہ دعا زہرہ کو اس کے والدین تک پہنچایا جائے جوکہ اس کے قانونی وارث ہیں۔ شرکا نے پاکستان ہائی کمیشن کے حکام کو یادداشت بھی پیش کی۔

50% LikesVS
50% Dislikes